بی جے پی انگریزوں کی ’تقسیم کرو اور راج کرو‘ کی پالیسی پر گامزن: فاروق عبداللہ

سرینگر//﴿آفتاب ویب ڈیسک ﴾ نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمان ڈاکٹر فاروق عبدللہ نے مودی حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت انگریزوں کی’ تقسیم کرو اور راج کرو ‘ کی پالیسی اختیار کر کے لوگوں کو ہندواور مسلمانوں میں تقسیم کر رہی ہے۔ فاروق عبدللہ جمعرات کو دستور ہند کے معمار ڈاکٹر بھیم رائو امبیڈکر کی برسی کے سلسلے میں منعقدہ تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا ’آپ ﴿مرکزی حکومت﴾ نے ساڑے چارسالوں میں کیا کیا ،صرف نفرتیں پھیلائی ہیں حتیٰ کہ جموں کے علاقے میں بھی ہندواور مسلمان کو تقسیم کرنے کی کوشش کی گئی ،کب تک ہندو مسلمان کو تقسیم کرو گے ،جتنا تقسیم کروگے اتناہی وطن کمزور ہوتا جائے گا ‘ ۔ انہوں نے کہا ’انگریزوں نے تقسیم کرو اور راج کی پالیسی اختیار کر کے دوسوسال ہندوستان میں حکومت کی اور آج جو حکومت دہلی میں ہے، یہ بھی اسی پالیسی پر گامزن ہے‘ ۔ان کا کہنا تھا کہ آ ج رام کے نام پرووٹ طلب کئے جاتے ہیں لیکن ان لوگوں کو بھگوان رام سے سبق لینا چاہیے۔بھگوان شری رام نے کبھی نفرت نہیں سکھائی بلکہ چودہ سال کا بن باس کاٹااور واپس اجودھیا لوٹنے پر سب کے لئے یکساں حقوق کی مانگ کی ۔رام بھگوان صرف ہندووں کے بھگوان نہیں بلکہ ساری دنیاکے ہیں۔انہوں نے ڈاکٹر بھیم راؤامبیڈکر کی خدمات کو یا د کرتے ہوئے کہا کہ ’ جو آئین آمبیڈکر نے اس وطن کو دیا وہ دنیاکا بہترین آئین ہے ، اس آئین کی رو سے ،یہ وطن سب کا ہے ،خواہ وہ کوئی کسی بھی مذہب ودھرم سے تعلق رکھتاہو ۔یہ وطن ہم سب کا ہے اس کے تحفظ کے لئے ہم سب کو مل جل کر چلناہو گا‘۔ انہوں نے کہا’انگریز وں نے ملک کو تقیسم کر کے ہندوستان اور پاکستان بنادیااور آج جو حکومت ہے وہ کیا پتہ وطن کے کتنے ٹکڑے کرے گی ،اگر ان کا یہ ہی راستہ رہاجس پر وہ گامزن ہیں ‘۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں