یوپی میں واجپائی کے نام کا نیا ضلع بنانے کی تجویز

لکھنؤ﴿یواین آئی﴾ اتر پردیش کی یوگی حکومت جلد ہی سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی کے نام پر ریاست کے 76ویں ضلع کا اعلان کر سکتی ہے ۔ اس ضلع میں ان کی جائے پیدائش بٹیشور شامل ہوگا۔ محکمہ موصولات کے ذرائع نے پیر کے دن یہاں بتایا کہ محکمہ نے آگرہ انتظامیہ کو سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کے نام پر ایک نیا ضلع بنانے کی تجویز بھیجی ہے ۔ نئے ضلع کا نام ‘اٹل نگر’ ہوگا۔ اس ضلع میں بٹیشور کو شامل کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ روینو محکمہ نے مقامی افراد کے مطالبے پر ضلع انتظامیہ سے اس تعلق سے رپورٹ طلب کی ہے ۔ محکمہ کے ہدایت پر آگرہ انتظامیہ نے ‘اٹل نگر’ نام سے نیا ضلع بنانے کی تجویز تیار کر لی ہے ۔ مجوزہ ضلع میں تین تحصیلیں ہوں گی۔ محکمہ کے ایک افسر نے بتایا کہ آگرہ سے کچھ لوگوں نے انتظامیہ سے سابق وزیر اعظم اٹل جی کے نام پر الگ ضلع بنانے کا مطالبہ کیا تھا۔ ریوینو محکمہ نے سابق وزیر اعظم کے نام پر ایک نیا ضلع کی تجویز دی ہے ، جس میں تین تحصیل باہ، فتح آباد باہ کے ساتھ نیا بٹیشور ضلع ہیڈکوارٹر ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ آگرہ انتظامیہ کی رپورٹ ملنے کے بعد ریوینو محکمہ اپنی رپورٹ حکومت کو بھیجے گی۔ اس کے بعد آخری فیصلہ کابینہ کے اجلاس میں ہوگا۔ مجوزہ اٹل نگر ضلع کا مجموعی رقبہ 1250 مربع کلو میٹر ہوگا اور یہ بھدوئی، شاملہ ،شراوستی اور ہاپڑ جیسے اضلاع کے مقابلے رقبے میں بڑا ہوگا۔ نئے ضلع کی مجموعی آبادی تقریبا 7.5 لاکھ ہوگی، جبکہ ہیڈکوارٹر باہ لکھنؤ۔آگرہ ایکسپریس وے سے محض 14 کلومیٹر دور ہوگا اور مجوزہ بندیل کھنڈ ایکسپریس وے اس سے ہوکر گزرے گا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں