جموں میں شاہ فیصل کے خلاف شیو سینا کا احتجاج

سرینگر//﴿آفتاب ویب ڈیسک ﴾ سرکاری ملامت سے رضاکارانہ طور پر مستعفی ہونے والے کشمیری آئی اے ایس ٹاپر شاہ فیصل کے خلاف جمعہ کے روز یہاں شیو سینا نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ شیو سینا یونٹ جموں و کشمیر کے صدر اشوک گپتا کی قیادت میں سینکڑوں شیو سینا کارکنوں نے جموں میں ایک احتجاجی ریلی نکالی نکال کر شاہ فیصل کے خلاف زبردست نعرے بازی کی۔ احتجاجی کارکنوں نے ہاتھوں میں شاہ فیصل کی تصویریں اٹھا کر شاہ فیصل کے خلاف زبردست نعرے بازی کی ۔ احتجاجی کارکنوں کا کہنا تھا کہ جس ملک نے شاہ فیصل کو عزت و وقار دیا اور آئی اے ایس آفیسر بنایا، آج وہ اسی ملک کے لئے نازیبا الفاظ کا استعمال کر رہے ہیں، جس کو ملک کبھی برداشت نہیں کرے گا۔ شیو سینا کے ریاستی صدر اشوک گپتا نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا 'جس ملک نے شاہ فیصل کو سر آنکھوں پر بٹھایا، آج وہ اسی ملک کو گالیاں دے رہے ہیں‘۔ انہوں نے کہا 'شاہ فیصل کا سرکاری ملازمت سے مستعفی ہونا، ان کا ذاتی فیصلہ ہے لیکن ملک کو گالیاں دینا، ملک کی بے عزتی کرنا اور سیکورٹی فورسز کے حوصلے پست کرناملک کی عوام قطعی برداشت نہیں کر ے گی‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک تعلیم یافتہ نوجوان جس کو ملک نے آئی اے ایس بنایا، آج وہ اسی ملک کو گالیاں دے رہا ہے ، جس کے ﴿شاہ فیصل﴾ والد کو پاکستانی حمایت یافتہ ملی ٹینٹوں نے مار دیا، آج شاہ فیصل انہی لوگوں کے نظریات سے متاثر ہو کر ملک کی بے عزتی کرے کر رہے ہیں، اس کو ملک برداشت نہیں کرے گا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں