صحافی رام چندر قتل معاملہ میں گرمیت رام رحیم سنگھ سمیت چار لوگ قصوروار قرار

پنچکولہ﴿یو این آئی﴾ مرکزی جانچ بیورو ﴿سی بی آئی﴾ کی خصوصی عدالت نے تقریبا 16 برس پرانے سرسہ کے صحافی رام چندر چھترپتی قتل معاملے میں سرسہ میں واقع ڈیرا سچا سودا کے سربراہ گرمیت رام رحیم سنگھ اور تین دیگر کو قصوروار قرار دیا ہے ۔ خصوصی جج جگدیپ سنگھ مذکورہ معاملے میں آج دوپہر فیصلہ سناتے ہوئے ڈیرہ سربراہ کے علاوہ تین دیگر کشن لال، کلدیپ اور نرمل کو بھی قصوروار قرار دیا ہے ۔ عدالت اب چاروں کو 17 جنوری کو سزا سنائے گی۔ گرمیت رام رحیم سنگھ کو روہتک کی سناریا جیل سے ہی ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ عدالت میں پیش ہوئے جہاں وہ سادھوی کے آبروریزی معاملے میں عمر قید کی سزا کاٹ رہے ہیں اور یہ سزا بھی خصوصی جج جگدیپ سنگھ نے ہی سنائی تھی۔ اس معاملے میں تین دیگر ملزموں کو پولس نے یہاں زبردست پہرے میں عدالت میں پیش کیا۔ مجرم قرار دیئے جانے کے بعد تینوں کو پولس نے حراست میں لے لیا اور انہیں انبالہ جیل لے جایا گیا ہے ۔ عدالت کے آج مبینہ معاملے میں فیصلہ سنائے جانے کے وجہ سے پنچکولہ اور سرسہ میں سلامتی کے انتظامات زبردست کئے گئے تھے ۔ سلامتی ایجنسیوں نے گزشتہ تلخ تجربے سے سبق لیتے ہوئے پورے پنچکولہ علاقے کو چھاؤنی میں تبدیل کردیا تھا۔ چپے چپے پر پولس تعینات کی گئی تھی۔ خصوصی عدالت کے احاطے اور اس کے اردگرد پوری قلعہ بندی کی گئی تھی۔شہر کے سبھی اہم سڑکوں پر کل سے پولس چیک پوسٹ بنائے گئے تھے ۔ چنڈی گڑھ میں بھی جگہ جگہ پولس چیک پوسٹوں کے علاوہ پولس کا زبردست پہرہ تھا۔ یہاں تک کہ خصوصی جج کو بھی زبردست سلامتی کے درمیان عدالت لایا گیا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں