انجینئر رشید بندشوں کے باوجود گورو کے گھر پہنچنے میں کامیاب

 سرینگر /سی این ایس /عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ انجینئر رشید نے سخت بندشوں کے باوجود پارٹی وفد کے ہمراہ شہید محمد افضل گورو کے گھر جا کر تعزیتی مجلس میں شرکت کی۔ اس موقعہ پر انجینئر رشید نے کہا ہے کہ افضل گورو اور مقبول بٹ کا بلاجواز عدالتی قتل کردیا گیاہے۔انہوں نے کہا کہ نئی دلی نہ صرف انکے قتل کیلئے کوئی جواز پیش نہیں کرسکتی ہے بلکہ ان دونوں لیڈروں کے جسد ہائے خاکی کو واپس نہ لوٹا نے کا بھی نئی دلی کے پاس کوئی جواز نہیں ہو سکتا ہے۔انجینئر رشیدنے اس موقعہ پر کہا’’یہ تاریخ کا ایک سیاہ باب ہے کہ جہاں تامل ناڈو کی اسمبلی نے راجیو گاندھی کے قاتلوں کی معافی کیلئے قرارداد منظور کی وہیں جموں کشمیر اسمبلی نے افضل گورو کی معافی کیلئے انجینئر رشید کی ایسی ہی ایک قرارداد کو ناکام کردیا۔یہ بات یاد رکھی جانی چاہیئے کہ جس دن میری پیش کردہ اس قراردپراد اسمبلی میںووٹنگ ہونی تھی مین اسٹریم کی جماعتوں نے ایک دوسرے پر الزام تراشی کرکے ایک ڈرامہ رچایا، عوامی اتحاد پارٹی نے بعدازاںکئی کانگریس لیڈروں سے ایک معافی نامہ جاری کرواکے اس سے یہ بات منوائی کہ افضل گورو کو انصاف نہیں مل سکا تھا، اور انہیں کشمیریوں کے حوصلے پست کرنے اور مسئلہ کشمیر کے حل کا مطالبہ کرنے سے روکنے کیلئے پھانسی دی گئی تھی۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں