دُلہا کرناہ میں درماندہ شادی ہوگی تو کیسے

سرینگر/ کے این ایس /کشمیر کے حالیہ ٹھنڈے برف نے راجستھان میں15فروری کوگرمائی جار رہی شادی کی تقریب کو ٹھنڈا کرنے کا امکان ہے ۔ کیونکہ جس نوجوان کی شادی انجام دی جا رہی ہے وہ سرحدی تحصیل کرنا میں حالیہ برف باری کے بعد کرناہ میں درماندہ ہو کر زبردست پریشانیوں میں مبتلا ہے ۔اس دوران نوجوان گور نر ستیہ پال ملک سے مداخلت کی اپیل کرتے ہوئے ائیر لفٹ کروانے کا مطالبہ کیا۔ بیرون ریاست راجستھان سے تعلق رکھنے والا ایک نوجوان منوج کمارگزشتہ ماہ سرھڈی تحصیل کرناہ آیا تھا ۔تاہم علاقے میں مسلسل سڑک رابطہ بند ہونے کی وجہ سے مزکورہ نوجوان بھی علاقے میں بند ہے ۔نمائندے نے کرناہ سے اطلاع دی ہے کہ مزکورہ نوجوان کی شادی15فروری کو طے ہوئی ہے ۔تاہم درماندہ ہونے کی وجہ سے وہ زبردست پریشانیوں کا سامنا کررہا ہے ۔/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 نوجوان نے اس حوالے سے گورنر ستیہ پال ملک سے اس سلسلے میں مداخلت کی اپیل کی ہے ۔کہ انہیں شادی سے قبل ائیر لفٹ کر کے جموں یا کشمیر پہنچا یا جائے تاکہ شادی کی اہم تقریب کو دلہے کی غیر موجود گئی کی وجہ سے ملتوی نہ کرنا پڑے ۔ منہوج کے مطابق شادی کے سلسلے میں انہوں نے پہلے ہی رشتہ داروں کو بھی بلایا ہے ۔خیال رہے مزکورہ علاقہ گزشتہ کئی روز سے وادی سے کٹ آف ہو کر ہ رہ گیا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں