محکمہ انکم ٹیکس کو میرے گھرسے کچھ بھی غیر قانونی نہیں ملا:ککڑ

اندور/مدھیہ پردیش کے وزیراعلی کمل ناتھ کے خصوصی ڈیوٹی افسر دâاوایس ڈیáپروین ککڑ پر انکم ٹیکس کی کارروائی کے بعد انہوں نے دعوی کرتے ہوئے کہا ہے کہ دودن تک تفصیلی تفتیش کے بعد بھی ان کے گھر سے کچھ قابل اعتراض سامان نہیں ملا ہے ۔مسٹر ککڑ کی اندور شہر کے وجے نگر علاقے میں واقع رہائش گاہ سمیت 5ٹھکانوں پر محکمہ انکم ٹیکس کی ٹیم تفتیش کرکے کل دیر رات یہاں سے روانہ ہوگئی۔انکم ٹیکس کی ٹیم کے واپس لوٹنے کے بعد کل دیررات مسٹر ککڑ نے نامہ نگاروں کے سوالوں کے جواب بھی دئے ۔انہوں نے انکم ٹیکس کی جانچ ٹیم پرالزام لگاتے ہوئے کہا کہ محکمے کے لوگ دو دن پہلے دیر رات ان کے گھر کا دروازہ توڑ کر اندر گھس آئے تھے ۔انہوں نے کہا کہ سیاسی رقابت کی وجہ سے ان کے خلاف چھاپہ مارنے کی کارروائی کی گئی ہے ۔حوالہ کاروبار سے جڑے ہونے سے متعلق الزامات پر مسٹر ککڑ نے کہا کہ یہ انہیں اور ان لوگوں کو بدنام کرنے کی سازش ہے جن کے لئے وہ کام کرتے ہیں۔مسٹرککڑ نے ایک دیگر سوال کے جواب میں کہا کہ انکم ٹیکس افسروں نے کارروائی کے دوران ان کے اوران کے گھروالوں کے ساتھ برا برتاؤ نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے محکمے کے سبھی جانچ افسروں کی کارروائی میں پوری طرح تعاون کیا ہے ۔مسٹر ککڑ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ وہ وزیراعلی کے اوایس ڈی کے طورپر اپنا کام جاری رکھیں گے ۔چھاپوں کے سلسلے میں سینٹرل بورڈ آف ڈائریکٹ ٹیکس âسی بی ڈی ٹیáکی جانب سے جاری ریلیز کے بارے میں پوچھے جانے پر انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں انہیں کوئی معلومات نہیں ہے ۔محکمہ انکم ٹیکس کی دہلی سے آئی ٹیموں نے اندور اور بھوپال میں اتوار کی صبح چھاپے مارنے کی کارروائی شروع کی تھی،جو پیر تک جاری رہی۔یہ کارروائی مسٹر ککڑ کے اندور میں واقع ٹھکانوں کے علاوہ بھوپال میں ایک کاروباری اشون شرما کے ٹھکانوں پر کی گئی۔کاروباری کے ٹھکانوں سے خطیررقم اور دیگر سازوسامان ضبط کیاگیا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں