سرینگر -جموں شاہراہ پر امکانی خودکش حملے کے خدشات  شاہراہ پوری طرح سے سیل،  وادی میں سیکورٹی کو ہائی الرٹ پر رکھاگیا، فوج اور پولیس متحرک

سرینگر/ جے کے این ایس /خفیہ اداروں نے الرٹ جاری کیا ہے کہ جموں سرینگر شاہراہ پر عسکریت پسند پلوامہ طرز پر ایک اور حملہ کرنے کی منصوبہ بندی کا رہے ہیں۔ انٹیلی جنس بیورو کی جانب سے اطلاع ملنے کے بعد وادی کشمیر میں ہائی الرٹ جاری کردیا گیا ہے جبکہ جموں سرینگر شاہراہ کو فوجی چھاونی میں تبدیل کیا گیا ہے۔وادی کے تمام پولیس اسٹیشنوں میں تعینات ایس ایچ اوز کو مستعد رہنے کے احکامات صاد رکئے گئے ہیں۔ اس بیچ شہر سرینگرمیں صبح تین گھنٹے تک موبائیل انٹرنیٹ کو منقطع کیا گیا تاہم بعد میں فور جی سروس کو دوبارہ بحال کیا گیا ۔  انٹیلی جنس بیورو نے جموں سرینگر شاہراہ پر ایک اور خود کش حملہ ہونے کے ضمن میں الرٹ جاری کیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ مرکزی سراغ رساں ایجنسی کی جانب سے الرٹ جاری کرنے کے بعد پوری وادی میں سیکورٹی فورسز اور پولیس کو متحرک رہنے کے احکامات /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 صاد رکئے گئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق جموں سرینگر شاہراہ کو فوجی چھاونی میں تبدیل کیا گیا ہے او رجگہ جگہ سیکورٹی فورسز کے اضافی دستے تعینات کئے گئے ہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ خفیہ ایجنسی انٹیلی جنس بیورو نے سیکورٹی ایجنسیوں کو تحریری طورپر آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ عسکریت پسند موٹر سائیکل کے ذریعے کانوائی کو نشانہ بنانے کی فراق میں ہے جس کے بعد پوری وادی میں سیکورٹی فورسز کو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ بانہال سے لے کر بارہ مولہ تک شاہراہ کو سیل کیا گیا ہے جبکہ جگہ جگہ فوج کی خصوصی گاڑیوں کو تیاری کی حالت میں رکھا گیا ہے۔ فوج کے ایک سینئر آفیسر نے اس بات کی تصدیق کی کہ سراغ رساں ایجنسیوں کی جانب سے الرٹ جاری کرنے کے بعد جموں سرینگر شاہراہ کو سیل کیا گیا ہے۔ مذکورہ آفیسر کے مطابق امکانی خود کش حملے کو ناکام بنانے کیلئے تمام طرح کے اقدامات کئے جارہے ہیں جبکہ مشتبہ افراد پر خصوصی نظر گزر رکھی جارہی ہے۔ دریں اثنا اتوار اعلیٰ الصبح سرینگر میں کئی گھنٹوں تک موبائیل انٹرنیٹ خدمات کو منقطع کیا گیا تاہم مختلف طبقہ ہائے فکر سے وابستہ افراد کی جانب سے شکایت کرنے کے بعد سیکورٹی اداروں نے فوری طورپر موبائیل انٹرنیٹ خدمات کو بحال کیا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں