بیساکھی کا تہوار وادی بھر میں جوش اور جذبے کے ساتھ منایا گیا

سرینگر/سی این آئی/بیساکھی کا تہوار ملک بھر کی طرح ریاست خاص کر وادی کشمیر میں بھی جوش اور جذبے کے ساتھ منایا گیا گردواروںمیں سکھ برادری سے وابستہ لوگوں نے خصوصی عبادت کی ۔ ریاست کے امن بھائی چارے ، خوشحالی کیلئے خصوصی دعائیں مانگی گئی اس موقعے پر اکثریتی طبقے سے وابستہ لوگوں نے سکھوں کو مبارکباد پیش کی ۔ بیساکھی کے تہوار کے موقعے پر مغل باغات کو بھی لوگوں کی سیر وتفریح کیلئے کھول دیا گیا بڑی تعداد میں سکھ برادری سے وابستہ نوجوانوں نے بانگڑا کیا اور سیر وتفریح کرنے والوں کو خوش کیا۔اسی دوران معلوم ہوا کہ بندش شاہراہ کے باعث امسال سکھوں کی زیادہ تعداد سرینگر وارد نہ ہو سکی ۔تفصیلات کے مطابق ملک بھر کی طرح بیساکھی کا تہوار ریاست خاص کرو ادی کشمیرمیں جوش اور جذبے کے ساتھ منایا گیا سکھ برادری سے وابستہ لوگوں نے گردواروں کو دلہنوں کی طرح سجایا تھا اور بڑی تعداد میں سکھ فرقے سے وابستہ لوگوں نے گردواروںمیں پوجا پاٹ کی اور خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔ چھٹی پادشاہی رعناواری ، برزلہ باغات ، چھٹی پادشاہی بارہ مولہ ، مٹن، بجبہاڑہ ، اور وادی کے اطراف واکناف میں قائم کئے گئے گردواروںمیں سکھوں نے بجن کیرتن کا پاٹ کیا اور اس موقعے پر گرو گوبند جی کی تعلیمات کوعام کرنے پر زور دیا ۔ دامودار سنگھ کے مطابق 1699میں 12اپریل کو گردو گوبند جی نے آنند پور میں سکھ مذہب کی بنیاد رکھی ہے اور گروگوبند جی نے سکھوں پر زور دیا کہ وہ دوسرے مذاہب کے ماننے والوں کے ساتھ حسن سلوک کریں اور ان کے ساتھ ہمیشہ روابط رکھیں۔/جاری صفحہ ۱۱ پر

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں