ماہ رمضان المبارک کی آمد پر میرواعظ کااظہار تہنیت کہا یہ مہینہ اللہ سے تعلق کو مضبوط کرنے کا ذریعہ ہے

سرینگرñ متحدہ مجلس علمائ کے امیر اعلیٰ میرواعظ ڈاکٹر مولوی محمد عمر فاروق نے مقدس اور متبرک ماہ رمضان کی آمد پر عالم اسلام ، ملت اسلامیہ خاص طور پر جموںوکشمیر کے مسلمانوں کو دلی مبارکباد اور تہنیت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ماہ صیام کی آمد ہم سب کیلئے نیکیوں ، سعادتوں اور حسنات کی فصل بہار کا موسم ہے ۔ ماہ رمضان میں ہی اللہ تعالیٰ نے پوری انسانیت کیلئے سرچشمئہ ہدایت قرآن کریم جیسی انقلابی کتاب کو پیغمبر آخر الزماں حضرت محمد ö پر نازل فرمایا اور جس نے اپنی آفاقی اور انسانیت ساز تعلیمات سے انسانیت کی رہبری کا فریضہ انجام دیا۔انہوں نے کہا کہ ماہ صیام ہمیں جہاں تزکیہ نفس ، عبادت و ریاضت اور اپنے اللہ سے تعلق کو مضبوط کرنے کا ذریعہ ہے وہیں اس ماہ صیام میں نماز اور روزوں کے اہتمام کے ساتھ ساتھ خیرات، صدقات اور زکوٰۃ کی ادائیگی سے خدمت خلق کا فریضہ احسن طریقے پر انجام دینے کا ایک ماحول بنتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ماہ رمضان ہمیں اس بات کی دعوت دیتا ہے کہ اللہ کی بندگی کے ساتھ ساتھ ہمارے سماج میں جو مستحق غریب ، یتیم اور نادار لوگ ہیں ان کی کما حقہ امداد اور ان کی دلجوئی کو بھی اپنے فرائض میں شامل کریں تب جاکر رمضان المبارک کے تقاضوں اور اسکی رحمتوں و برکات سے صحیح طور پر مستفید ہونا ممکن ہے ۔میرواعظ نے مسلمانوں پر زور دیا کہ ماہ رمضان میں حق اللہ کی ادائیگی کے ساتھ ساتھ حقوق العباد کی ادائیگی کی طرف بھی بھر پور توجہ دیں اور اصلاح نفس کے ساتھ ساتھ اصلاح معاشرہ کیلئے عملاً اپنا کردار ادا کرنے کی کوشش کریں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں