زہریلی شئے کو پتی سمجھ کر چائے میں ملا دیا گیا، 5  افراد ہسپتال میں داخل

سرینگر/ جے کے این ایس /شمالی کشمیر میں زیریلی چائے نوش کرنے کے بعد ایک ہی گھر کے 5 افراد کو اسپتال میں داخل کیا گیاجہاںان کا علاج جاری ہے ۔ادھر پولیس نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ایک خاتون سمیت پانچ افراد کو ماگام اسپتال منتقل کیا گیا جہاں سے انہیں جے وی سی منتقل کیا گیا۔ شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ کے کنزر ٹنگمرگ علاقے میں اتوار کے روز ایک ہی گھر کے تین افراد سمیت/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
5شہریوں کو زہریلی چائے پینے کے بعد بیمار ہو کراسپتال میں داخل کیا گیا۔ذرائع کے مطابق گذشتہ اتوارکوعبد الغنی صوفی کی اہلیہ80 ساجہ بانو اپنے شوہر بیٹے اور دو ہمسایوں کیلئے چائے تیار کرتے ہوئے کسی زہریلی شے کو چائے کی پتی سمجھ کر استعمال کیا۔جس کے نتیجے میں چائے کی پیالی نوش کرنے کے بعد مزکورہ چائے تیار کرنے والی خاتون سمیت 5افراد کو اسپتال میں داخل کیا گیا ہے پولیس ذرائع نے مزکورہ زفراد کی شناخت عبد الغنی صوفی، اْن کی اہلیہ ساجہ، اْن کا بیٹا فاروق احمد صوفی، غلام قادر وازہ اور غلام محمد وانی ساکنان اتکو دھوبی کے طور کی ہے ۔ پولیس کے ایک افسر کے مطابق خاتون سمیت جن پانچ افراد نے چائے استعمال کی تھی، اْنہیں ضلع کے ماگام اسپتال پہنچایا گیا جہاں سے اْنہیں جے وی سی بمنہ منتقل کیا گیا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں