شہر میں ایک درجن معروف تاجروں کے دفاتر اور رہائش گاہوں پر انکم ٹیکس کے چھاپے،  سرینگر میونسپل کارپوریشن کے ڈپٹی مئیر کے دفاتر اور رہائش گاہ سے دستاویزات ضبط، اہم انکشافات متوقع

سرینگر/ یو این آئی / جے کے این ایس / اے پی آئی / محکمہ انکم ٹیکس کے اہلکاروں نے منگل کے روز سری نگر میونسپل کارپوریشن کے ڈپٹی میئر اور جموں وکشمیر پیپلز کانفرنس لیڈر شیخ محمد عمران کے ریاست و بیرون ریاست قائم قریب ایک درجن دفاتر و تجارتی یونٹس پر چھاپے ڈالے۔میڈیا رپورٹوں کے مطابق انکم ٹیکس اہلکاروں نے منگل کی صبح شیخ عمران کے تجارتی یونٹ ’’قہوہ گروپ‘‘ کے جموں کشمیر میں  قائم آٹھ یونٹس اور دلی و بنگلور میں قائم ایک ایک یونٹ پر چھاپے ڈالے۔انکم ٹیکس اہلکاروں نے قہوہ گروپ کے شہر خاص کے بہوری کدل علاقے اور سری نگر میں واقع دیگر سات مقامات بشمول مولانا آزاد روڑ اور نوگام میں قائم تجارتی یونٹس پر چھاپے ڈالے نیز دلی اور بنگلور میں قائم اس کے یونٹس پر بھی چھاپے ڈالے۔رپورٹس کے مطابق قہوہ گروپ کے تجارتی یونٹس پر انکم ٹیکس اہلکاروں کے چھاپے مبینہ طور پر جموں کشمیر بنک پر سٹیٹ اینٹی کرپشن بیورو کے حالیہ چھاپوں کے سلسلے کی ایک کڑی ہے۔اس دوران شیخ محمد عمران نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ وہ تحقیقات میں اپنا مکمل تعاون دیں گے۔ ان کا کہنا تھا،شفافیت اور انکم ٹیکس قوانین کی تعمیل کو یقینی بنانے کے لئے میں تحقیقات میں اپنا مکمل تعاون دوں گا۔ میں محکمہ انکس ٹیکس کو اپنا بھرپور تعاون دینے کے لئے تیار ہوں۔ میں قانون کو ماننے والا بزنس مین ہوں۔ادھرجموںوکشمیر بینک کے ہیڈ کواٹر پر چھاپہ ماری کے دوران بینک سے غلط طریقے سے قرض حاصل کرنے والوں کے خلاف انکم ٹیکس محکمہ نے بڑے پیمانے پر کریک ڈاون شروع کیا ہے۔ انکم ٹیکس حکام نے سرینگر کے 10معروف تاجروں کے پرائیوٹ دفاتر پر چھاپے ڈالے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ قرضوں کی ادائیگی میں لیت ولعل کا مظاہرہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔  جموںوکشمیر بینک ہیڈ کواٹر پر چھاپہ ماری کے بعد/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 انکم ٹیکس حکام نے معروف تاجروں جنہوںنے بینک سے قواعد و ضوابط کے برعکس بڑی مقدار میں قرض رقم حاصل کیاہے اور پچھلے کئی برسوں سے لون کی رقم ادا نہیں کررہے ہیں اُن کے خلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈاون شروع کیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اینٹی کرپشن بیورو نے جموںوکشمیر بینک ہیڈ کواٹر سے لگ بھگ تین سو زائد فائلیں ضبط کیں اور ان فائلوں میں ایسے افرا دکا نام سامنے آیا ہے جنہوںنے لون کی رقم حاصل کرکے آج تک ادائیگی نہیں کی ہے۔ ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ ایسے افراد کی جائیداد کو ضبط کرنے کا بھی قوی امکان ہے۔ دریں اثنا انکم ٹیکس محکمہ نے سرینگر میں معروف تاجروں کے دس پرائیوٹ دفاتر پر چھاپے ڈالے اور وہاں سے کاغذات کو تحویل میں لے لیا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں