2 خواتین سمیت 3افراد جاں بحق ،2 زخمی، ڈوڈہ میں ہائی الرٹ ،تعلیمی اداوں میں کام کاج معطل، سونہ مرگ میں برفباری، بڈگام میں لوگوں نے6 سوبھیڑ بکریوں کو غرقآب ہونے سے بچالیا، انتظامیہ متحرک

ٹنل کے آر پار طورفانی بارشیں اور تیز آندھی کے بعد سیلابی صورت حال ،کئی رابطہ پل بہہ گئے،متعدد بستیاں اور سڑکیں زیر آب

سرینگر/ کے این ایس /جے کے این ایس / ریاست جموں کشمیر میں ٹنل کے آر پا رایک رات کی شدید بارشوںاور تیز آندھی کے بعد سیلابی صورت حال پیدا ہوئی ہے جس کے نتیجے میں بانڈی پورہ اور گاندر بل میں درخت گر آنے کے نتیجے میں2خواتین سمیت3افراد لقمہ اجل بن گئے جبکہ خطہ چناب کے ڈوڈہ ضلع میں انتظامیہ نے موسم کی ابتر حالت دیکھ کر ہائی ا لرٹ جاری کر کے تمام تعلیمی اداروں کو بند کر دیاہے ۔اس دوران سیاحتی مقام سونہ مرگ میںتازہ برف باری ہوئی ہے جبکہ شمالی کشمیر کے بارہمولہ ،بڈگام ،اور سوپور کے علاوہ شمالی جنوب/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 میں متعدد رابطہ پل ڈہہ جانے کے علاوہ سڑکیں زیر آب آگئیں ہیںجبکہ کئی مقامات پر رہائشی مکانوں میں پانی داخل ہوا ہے ۔وسطی ضلع بڈگام میں مقامی لوگوں نے چوپان کنبے کے600کے قریب بھیڑ بکریوں کو غرق ہونے سے بچالیا ہے ۔ ادھر واقعے کے بعد پوری وادی میں سیلابی صورت حال پیدا ہونے کے ساتھ وادی کے شمال و جنوب میں بجلی بحران پیدا ہوا۔ادھر انتظامیہ نے متاثر علاقوں کا دورہ کر کے حالات کا جائزہ لے لر مشینری کو متحرک کر دیا ہے ۔ وادی کشمیر میں منگل کی شام دیر گئے سے شدید بارشوں اور کئی علاقوں میں تیز آندھی کا سلسلہ شروع ہوا جو بدھ کے صبح6بجے تک جاری رہا ہے جس نتیجے میںوسطی ضلع گاندر بل اور ش،الی کششمیر کے گاندربل میں 2خواتین سمیت 3افراد لقمہ اجل بن گئے۔اس سلسلے میں بانڈی پورہ سے کے این ایس کے نامہ نگار نے جو اطلاع دی ہے کہ ضلع کے چندا جی نامی جنگلاتی علاقے میں بدھ کے صبح تیز آندھی چلنے کے نتیجے میں ایک بھاری بھرکم درخت جڑ سے اْکھڑ کر عارف حسین نامی ایک شہری کے مکان پر گرآیا جس کے نتیجے میں مکان میں موجود2 جواں سال خواتین  بری طرح زخمی ہوئیں اس دوران اگر چہ دونوں خواتین کو اسپتال منتقل کرنے کے کوشش کی گئی تاہم دونوں خواتین اسے سے قبل ہی دم توڑ چکے تھے ۔پولیس نے جاں بحق خواتین کی شناخت مبینہ بانو دختر ذاکر حسین اور شریفہ زوجہ عارف حسین نامی دو خواتین لقمہ اجل بن گئیں۔اس دوران دونوں خواتین کی ہلاکت کی خبر پھیلنے کے ساتھ ہی علاقے میں کہرام مچ گیا ہے ۔ ایس ایس پی بانڈی پور نہ بتایا پولیس نے واقعے کے حوالے سے ایک کیس درج کر کر تفصیلات جمع کئے ہیں ۔ ادھر وسطی ضلع گاندر بل  سے نامہ نگار غلام نبی رینہ نے اطلاع دی ہے کہ ضلع رامواری علاقے میں عارضی طر ایک ٹینٹ میں رہائش پزیر محمد یوسف کلاڑا ولد عبدلغنی کلاڑا ساکن راجوری کے ٹنٹ پرصبح سویرے تیز آندھی کے دوران ایک درخت جڑ سے اکھڑ گیا جو ٹنٹ میںبھی اسی طرح کے ایک واقعے میں تیز ہوائوں سے ایک درخت اکھڑ کر ایک ٹینٹ پر گر آیاپولیس کے مطابق جس کے نتیجے میں ٹینٹ میں موجود ایک شہری محمد یوسف کلاڈا ولد عبدالغنی کلاڈا ساکنہ راجوری بری طرح زخمی ہوا سا دوران اگر چہ مزکورہ شہری کو اسپتال منتقل کیاگیا ہے جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ بیٹھا ہے ۔ جبکہ اس حادثے میں مہلوک کے  دو رشتہ دار غلام حیدر ولد دائود اور عبد الطیف ولد محمود ساکنان راجوری بری طرح زخمی ہوئے  ڈی سی گاندربل حشمت علی خان نے بتایا کہ رامواری گنڈ میں تیز ہواؤں کے نتیجے میں بکر والوں کے ٹینٹ پر درخت گرآئی جس کی وجہ سے 37 برس کا محمد یوسف کلاڈا ولد عبدل غنی کلاڈا ساکن راجوری موقع پر ہلاک ہوگیا جبکہ 33 برس کا غلام حیدر ولد داود 30 برس کا عبدل لطیف ولد محمود ساکن راجوری شدید طور پر زخمی ہوگئے جن کو علاج معالجہ کے لئے سرینگر ریفر کیا گیا ھے ایس ایس پی گاندربل خلیل احمد پوسوال نے بتایا کہ شتکڑی سونہ مرگ سے تین کلو میٹر کی دوری پر واقع پہاڑی کے نزدیک پولیس نے چار خاندانوں کے 22افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا گیا ھے ادھر کرگل میں شدید بارشوں اور ہلکی برفباری کی وجہ سے ضلع انتظامیہ نے تعلیمی اداروں کو بند رکھنے کی ہدایت دی ھے ضلع ترقیاتی کمشنر کرگل بصیرالحق چودھری نے بتایا کہ ہلکی برفباری اور شدید بارشوں کی وجہ سے کرگل اور دراس میں بدھوار کو تمام تعلیمی اداروں کو بند رکھنے کی ہدایت دی گئی تھی۔ادھر وادی کشمیر میں تیز آندھی کے ساتھ ساتھ تیز بارشیں بھی ہوئیں جس کے نتیجے میں ندی نالوں میں تغیانی آنے کے ساتھ ہی اکژعلاقوں کی رابطہ سڑکیں زیر آب آگئیں جبکہ بیشتر بستیوں میں پانی داخل ہونے کے نتیجے میں لوگوں میں خوف و ہشت کا ماحول پیدا ہوا ۔ بڈگام سے کشمیر نیوز سروس کے نامہ نگار اعجاز احمد نے اطلاع دی ہے کہ ضلع دودھ گنگا نالے کے بیچوں بیچ سوگام پل کے نذدیک2کنبے اپنا مال مویشی کے ساتھ پھنس گیا تھا جس دوران مقامی لوگوں نے بدھ کے صبح دونوں کنبوں کے550بھیڑ بکریوں اور انسانی جانوںکو بہہ جانے سے بچالیا۔اس نالے میں گذشتہ شب کی موسلادھار بارشوں کے بعد سیلابی صورتحال پیدا ہوئی تھی۔نمائندے کے مطابق علاقے میں نالے میں پانی کے تیز بہاو کے بعد مزکورہ کنبے اسے پار نہیں کر سکے جس کی اطلاع مقامی لوگوں لو ملی ہے جنہوں نے بر وقت پر متحرک ہوکر ایک عارضی پل تعمیر کر کے بچائو کارروائیاں عمل میں لاتے ہوئے گڈریوں اور اْن کے مال و اسباب سمیت بچالیا گیا۔نمائندے کے مطابق ضلع کے سکھ ناگ نالے میں تغیانی آنے کے نتیجے میں ضلع کے کھاگن بیرہ وہ ،ماگام ، گوری پورہ ،سیل،آورہ،کانہامہ ،قمر پورہ،زنگام ،گنہ گنڈ،دوغیرہ علاقوں میں پانی داخل ہوا جس کے نتیجے میں مزکورہ علاقوں کی اکثر رابطہ سڑکیں ناقابل آمد رفت بن چکے ہیں ۔ادھر جبکہ کئی علاقوںمیں بارشوں کا پانی ندی نالوں کا پانی رہائشی مکانوں میں داخل ہوا ۔ ادھرشمالی کشمیر کے سوپور علاقے میں بھی متعدد سڑکیں زیر آب آگئیں جبکہ کئی  مقامات پر مکانوں میں بھی پانی داخل ہوا ۔سوپور سے کے این ایس کے نامہ نگار سید فیاض بخاری نے اطلاع دی ہے گزشتہ رات کی تیز بارشوں کے بعد علاقے کے تازو،شیر کالونی ،میرپورہ  اور ڈگری کالج بستیوں میں پانی داخل ہوا ہے جس کے نتیجے میں لوگوں میںزبردست خوف و دشت کا ماحول پیدا ہوا ہے اس دوران ایس ڈی ایم سوپور نے علاقے کا دورہ کر کے مشینری کو متحر ک کر دیا ہے ۔ ادھر صوبہ جموں کے خطہ چناب کے ڈوڈہ علاقے میں تیز بارشوں کے بعدضلع انتظامیہ نے بدھ کو موسلادھار بارشوں سے پیدا صورتحال کے پیش نظر ریڈ الرٹ جاری کرتے ہوئے سکولوں کو بند رکھنے کے احکامات صادر کرلئے۔اس دوران چیف ایجو کیشن آفیسر،طارق حسین خوجہ کے مطابق محکمہ موسمیات نے مزید موسلادھار بارشوں اور پسیاں گر آنے کی پیش گوئی کر رکھی ہے جس کے پیش نظر آج کیلئے سکولوں کو بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔۔محکمہ موسمیات نے لوگوں کو احتیاط کے طور پسیاں گر آنے والے علاقوں سے دور رہنے کی صلاح دے رکھی ہے جس دوران لوگوں کو احتیاط برتنے کی اپیل کی گئی ہے ۔ ادھر میدانی علاقوں میں شدید بارشیں ہوئیں وہی سیاحتی مقام سونہ مرگ میں برفباریہونے کے بعد سرینگر۔لیہہ شاہراہ کو ٹریفک کی آمد رفت کے لئے بند کر دیا گیا ۔سونہ مرگ سے نمائندے نےسرکاری ذرائر سکے حوالے سے اطلاع دی ہے سیاحتی مقام سونہ مرگ اور اس کے آس پاس کے علاقے میں بدھ کوتازہ برفباری ہوئی ہے جبکہ وادی بھر میں شدید بارشوں کی وجہ سے درجہ حرارت میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔حکام کے مطابق سونہ مرگ، ناراناگ اور گرد و نواح میں آج صبح تازہ برفباری ہوئی۔انہوں نے مزید کہا کہ زوجیلا پاس اور بالہ تل علاقوں سے بھی تازہ برفباری کی اطلاعات موصول ہوئی ہیںجس کے بعدپولیس نے سرینگر۔لیہہ شاہراہ پر ٹریفک کو روک دیا گیا ہے۔ادھر ضلع میںنالہ سندھ پر ٹنگہ چھتر نامی مقام پر بنا پل پانی کے تیز بہائو میں ڈھ گیا ہے۔ٹنگمرگ سے کے این ایس کے نمائندے مشتاق الحسن نے اطلاع دی ہے کہ علاقے میں تیز بارشوں کے علاقے میں تیز بہاو والے پانی کے بہائو سے پْل ڈھ گیا۔نمائندے کے مطابق گذشتہ رات کی موسلادھار بارشوں کے نتیجے میں شمالی کشمیر کے ٹنگمرگ میں چاندل۔وانیگام روڑ پر بنا ،نالہ فیروزپورہ کا پل پانی کے تیز بہائو میں آکر ڈھ گیا جس سے درجنوں دیہات کٹ کر رہ گئے ہیں۔جبکہ پٹن کے کھورو ، شیرا باد اور ہانجی ویرا گائوں میں مسلسل بارشوں کے نتیجے میں بہت پانی جمع ہوا ہے جس سے لوگوں کی نقل و حمل محدود ہوکر رہ گئی ہے۔خیال رہے کہ وادی بھر میں گذشتہ رات کے دوران زور دار بارشیں ہوئیں اور تیز ہوائیں چلیں جس کی وجہ سے بیسیوں علاقے زیر آب آگئے ہیں اور کئی راستے مسدود ہوکر رہ گئے ہیں۔ادھر صوبائی انتظامیہ نے علاقے میں تمام سرکاری مشینری کو متحرک کر دیا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں