شاہ فیصل اور انجینئر رشید نے ہاتھ ملایا، 45نکات پر مشتمل ایجنڈا آف الائنس بھی جاری کیا،پیپلز یونائٹڈ فرنٹ کا قیام عمل میں لایا

سرینگر/ یو این آئی /جموں کشمیر میں رواں سال کے اواخر میں ہونے والے اسمبلی انتخابات سے قبل جموں کشمیر پیپلز موومنٹ کے صدر ڈاکٹر شاہ فیصل اور عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ انجینئر رشید نے 'پیپلز یونائٹڈ فرنٹ' کے بینر کے تلے اکٹھا ہونے کا اعلان کردیا ہے۔منگل کے روز یہاں ایوان صحافت میں ڈاکٹر شاہ فیصل اور انجینئر رشید نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران 'پیپلز یونائٹڈ فرنٹ' کو متعارف کرتے ہوئے کہا کہ ریاست کے موجودہ غیر یقینی سیاسی صورتحال کے پیش نظر فرنٹ کو معرض وجود میں لانا وقت کی اہم ضرورت تھا۔ اس موقع پر انہوں نے 45 نکات پر مشتمل ایجنڈا آف الائنس بھی جاری کیا اور انجینئر رشید نے دعویٰ بھی کیا کہ ریاست میں اگلی سرکار پیپلز یونائٹڈ فرنٹ کی ہوگی۔ اس موقع پر دونوں جماعتوں کے دیگر سینئر لیڈران بشمول جاوید مصطفی میر بھی موجود تھے۔ڈاکٹر شاہ فیصل نے کہا کہ پیپلز یونائٹڈ فرنٹ کو جموں کشمیر کے لوگوں کو ایک معتبر سیاسی متبادل فراہم کرنے کے لئے معرض وجود میں لایا گیا۔ انہوں نے کہا: 'پیلز یونائٹڈ فرنٹ کو جموں کشمیر کے لوگوں کو ایک معتبر سیاسی متبادل فراہم کرنے کے لئے وجود میں لایا گیا، یہ فرنٹ ریاست کے تمام لوگوں کی آواز ہوگا اور تمام لوگوں کے حقوق و انصاف کے لئے بات کرے گا'۔
شاہ فیصل نے کہا کہ وہی لوگ جدوجہد اور قربانی کی بات کرسکتے ہیں جنہوں نے خود جدوجہد بھی کی ہو اور قربانیاں بھی دی ہوں اور اس فرنٹ کے بینر کے تلے وہی لوگ جمع ہوں گے جو ریاست کے لئے کچھ کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا: 'پیپلز فرنٹ کے بینر کے تلے وہی لوگ اکٹھا ہوسکتے ہیں جو ریاست کے سبھی لوگوں کے لئے کچھ کرنا چاہتے ہیں اور سب سے بڑی بات، جس نے ہمیں متحد ہونے پر مجبور کیا، وہ یہ ہے کہ کل جب تاریخ لکھی جائے گی اور یہ دیکھا جائے گا کہ جب ریاست کے وجود کی لڑائی تھی اس وقت لوگ منقسم ہوگئے یا متحد ہوگئے، ہم نے اپنی طرف سے ایک چھوٹی سی پہل کی ہے اور امید ہے کہ سبھی لوگ، تمام خطوں اور مذاہب کے لوگ اس کوشش کو مضبوط بھی کریں گے اور کامیاب بھی کریں گے'۔شاہ فیصل نے کہا کہ پیپلز فرنٹ بنانے کا مقصد یہ ہے کہ جو ہمارے پاس بچا ہے اس کو بچایا جاسکے اور جو ہم سے چھینا گیا ہے اس کو واپس لایا جاسکے۔انہوں نے کہا کہ دفعہ 35 اے اور اسمبلی حلقوں کی از سر نو حد بندی کے حملے ہو رہے ہیں وہ سب سیاسی نوعیت کے حملے ہیں ان کا مقابلہ سیاسی طور پر کیا جائے گا اور انتخابی سیاست اور جمہوری طریقے سے ہم اس کا جواب دیں گے۔ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ جو چیزیں آج تک نہیں ہوئی ہیں ان کے حصول کے لئے پُرخلوص طریقے سے جدوجہد کریں گے۔فیصل نے کہا کہ فرنٹ کو جموں، لداخ یا کشمیر کے لوگوں کو درپیش پریشانیوں اور نا انصافیوں کو دور کرنے کے لئے بنایا گیا ہے۔انہوں نے کہا: 'ایک مسئلہ کشمیر ہے اور دوسرا مسائل کشمیر ہیں، جو روز مرہ کی پریشانیاں ہیں چاہے وہ جموں کے لوگ ہوں، لداخ کے لوگ ہوں یا کشمیر کے لوگ ہوں انہیں پریشانیوں سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے، ترقی کے مسائل ہیں، روزگار کے مسائل ہیں یہاں کے دفاتر میں جو چوریاں ہورہی ہیں ان نا انصافیوں کو دور کرنے کے لئے یہ پارٹی بنائی گئی'۔ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ لوگوں کو لفظیات میں الجھانے کی ضرورت نہیں ہے بلکہ ضرورت اس بات کہ ہے کہ ایک نئی شروعات ہوئی ہے اور یہ ان لوگوں نے کی ہے جنہوں نے قربانیاں دی ہیں۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عوامی اتحاد پارٹی کے سربراہ انجینئر رشید نے پیپلز یونائٹڈ فرنٹ کے وجود کو وقت کی اہم ضرورت قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم فکر لوگوں کے ایک وسیع ایجنڈے کی ضرورت تھی جو لوگوں کو مسائل کے بھنور سے باہر نکال سکیں۔انہوں نے مرکز سے اپیل کی کہ وہ ریاست کے لوگوں کو بنیادی سیاسی حقوق سے محروم نہ رکھیں اور یہاں اولین فرصت میں اسمبلی انتخابات منعقد کرائیں۔انجینئر رشید نے کہا کہ ریاست میں اگلی سرکار پیپلز یونائٹڈ فرنٹ کی ہوگی۔ انہوں نے کہا: 'میں آپ کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ ریاست میں اگلی حکومت پیپلز یونائٹڈ فرنٹ کی ہوگی، ہم نے نوکریاں چھوڑ دی ہیں، ہم لوگوں کو اقربا پروری اور رشوت ستانی سے پاک و صاف حکومت دیں گے اور ساتھ ہی کشمیر کے سیاسی حل کے لئے بھی جو کچھ بھی کرنا پڑے گا، کریں گے'۔رشید نے کہا کہ ریاست کی علاقائی پارٹیاں پی ڈی پی، نیشنل کانفرنس یہاں کے لوگوں کی خواہشات کو پورا کرنے میں ناکام ہوئی ہیں لیکن خدا نے چاہا تو پیپلز یونائٹڈ فرنٹ ریاست کے تینوں خطوں کی ترجمانی کرے گا۔انہوں نے کہا کہ ہم ان تمام لوگوں کے ساتھ بات کرنے کے لئے تیار ہیں جو ہمارے ایجنڈا آف الائنس پر بھروسہ کریں گے۔انجینئر رشید نے کہا کہ پیپلز یونائٹڈ فرنٹ کسی خطے، سیاسی جماعت یا قوم کے خلاف نہیں ہے بلکہ یہ لوگوں کو متحد کرنے کے لئے معرض وجود میں آیا ہے۔انہوں نے کہا: 'فرنٹ کسی خطے یا سیاسی جماعت کے خلاف نہیں ہے بلکہ یہ لوگوں کو متحد کرنے کے لئے بنایا گیا ہے، ہمارے مسائل یکساں ہیں ہم بی جے پی، پی ڈی پی یا کانگریس کے ووٹروں کے لئے بھی آواز بلند کریں گے کیونکہ ہمارے مسائل و مصائب ایک ہیں'۔الائنس کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کہ یہ الائنس کب تک رہے گا، کا جواب دیتے ہوئے انجینئر رشید نے کہا: 'یہ الائنس تب تک رہے گا جب تک اس کی ضرورت ہے، میرے خیال میں یہ مرتے دم تک رہے گا، یہ الائنس قیامت کی صبح تک جاری رہے گا، یہ جموں کے ڈوگرہ بھائیوں، لداخ کے لوگوں اور کشمیر کے لوگوں کی مجبوری ہے'۔انہوں نے کہا کہ ہم کسی کے خلاف ہیں نہ کسی سے خائف ہیں اور نہ ہی ہم کسی کا ووٹ تقسیم کرنا چاہتے ہیں۔انجینئر رشید نے کہا کہ جن لوگوں نے کشمیر کو 70 برسوں تک لوٹا ان کو چاہئے کہ وہ یہاں نئی سیاسی لیڈر شپ کو ابھرنے کا موقع دیں۔انہوں نے کہا ہمارا نعرہ 'تخت بدل دو، تاج بدل دو، بے ایمانوں کا راج بدل دو' ہوگا۔انجینئر نے مزید کہا کہ ہم لوگوں کے لئے جئیں گے، لوگوں کے لئے مریں گے اور لوگوں کے بیچ رہیں گے۔یو این آئی

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں