کابینہ نے مخنثوں کے حقوق کے تحفظ کے بل 2019 کو منظوری دی

نئی دہلی، 10 جولائی âیواین آئیá وزیراعظم نریندر مودی کی سربراہی میں مرکزی کابینہ نے مخنثوں کے حقوق کے تحفظ کے بل2019 کو منظوری دے دی ہے ۔یہ بل پارلیمنٹ کے آئندہ اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔یہ بل مخنثوں کی بڑی تعداد کو فائدہ پہنچائے گا۔ ان کے ساتھ امتیاز کو ختم کرے گا اور مخنثوں کے خلاف بھید بھاؤ اور کسی طرح کے لگنے والے دھبے سے انہیں چھٹکارا دلائے گا اور انہیں معاشرے کے دھارے میں لانے میں مدد گار ثابت ہوگا۔ اس سے معاشرے کے اس طبقے کو زندگی ایک عام آدمی کی طرح زندگی گزارنے میں مدد ملے گی۔ملک میں مخنث برادری کا سب سے زیادہ محروم طبقے میں شمار ہوتا ہے کیونکہ وہ مرد یا خواتین کے زمرے میں فٹ نہیں ہوتے ہیں۔ اس کے نتیجے میں انہیں بہت سی سہولتوں کے علاوہ دیگر مسائل کاسامنا کرنا پڑتاہے اس کے علاوہ ان سے امتیاز بڑتا جاتا ہے ۔ بے روزگاری، تعلیمی سہولیات، سماج میں امتیاز اور طبی سہولتوں کی کمی جیسے مسائل کا بھی انہیں سامنا کرنا پڑتا ہے یہ بل مخنث برادری کو سماجی، تعلیمی اور اقتصادی اعتبار سے با اختیار بنائے گا۔ دریں اثنائ مرکزی کابینہ نے کاروبار کے لئے سازگار ماحول پیدا کرنے کی اپنی مہم کے تحت ‘ پیشہ جاتی تحفظ صحت ورکنگ کنڈیشن بل 2019 ضابطہ’ کو پارلیمنٹ میں پیش کرنے کی منظوری دے دی۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں