انسانی حقوق کی پامالیوں سے متعلق تازہ رپورٹ قابل داد: مولانا عباس انصاری، ہندوپاک کشمیریوں کو اعتماد میں لیکر مسئلہ کشمیر کو حل کریں: اتحاد المسلمین

سرینگر// کل جماعتی حریت کانفرنس کے سینئر رہنما اور جموں و کشمیر اتحاد المسلمین کے سربراہ مولانا محمد عباس انصاری نے کشمیر میں ہورہی انسانی حقوق کی پامالیوں پر اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق کونسل کی جانب سے تازہ رپورٹ کی سراہنا کرتے ہوئے اسے خوش آئند اور  قابل داد قرار دیا ہے۔ اپنے بیان میں انصاری صاحب نے کہا کہ انسانی حقوق کونسل کی اس رپورٹ نے کشمیر میں دہائیوں سے جاری انسانی اقدار کی پامالیوں کوبے نقاب کیا ہے اور خواب خرگوش میں محو اقوام عالم کو بیدار کرنے کیلئے یہ رپورٹ ایک اہم کردار ادا کرے گا۔ انہوں نے اقوام متحدہ پر زور دیا کہ وہ اس تازہ رپورٹ اور سال گزشتہ کے رپورٹ کے حوالے سے مثبت اقدامات اٹھائیں اور رپورٹ میں کشمیری عوام کو انصاف فراہم کرنے کی بات کی جانب عملی طور اقدام کریں۔ انہوں نے کشمیر میں جاری بدترین انسانی پامالیوں پرفوری روک لگانے کیلئے عملی اور کارگر اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کرتے ہوئے ہندوستان اور پاکستان دونوں پر زور دیا ہے کہ مذکورہ رپورٹ میں تجویز کئے گئے اقدامات پرعمل کرکے اس صورتحال کا تدارک کیا جائے۔ مولانا نے ہندوپاک کے سربراہان سے درخواست کی کہ وہ آپسی اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر مذاکرات کی میز پر آئیں اور سہ فریقی و باعمل مذاکرات کے ذریعے اس دیرینہ تنازعہ کا حل ڈھونڈیں تاکہ برصغیر میں امن و امان کی فضا قائم ہوسکے اور کشمیر میں بھی تمام طرح کی خونریزی اور انسانی حقوق کی پامالیوں کو ختم کرکے انسانیت کو فروغ دیا جائے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں