ڈاکٹر فاروق کی درگاہ حضرت بل میں حاضری شخصی راج کےخلاف جدوجہد میں جانیں قربان کرنےوالوں کو خراج عقید ت اداکیا

سرینگر//صدرِ نیشنل کانفرنس و ممبر پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کل آثار شریف درگاہ حضرت بل میں حاضری دی اور وہیں نماز جمعہ بھی ادا کی۔ڈاکٹر فاروق نے اس موقعہ پر جموں وکشمیر میں مکمل امن و امان، عالم اسلام کی سربلندی، عالم انسانیت کی بقا، ریاست کے لوگوں کی خوشحالی و ترقی کے علاوہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان مضبوط دوستی ، دونوں پڑوسی ممالک کے لوگوں کی خوشحالی و فارغ البالی اور مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے دعا کی۔سرےنگر//ےوم شہدائے کے اہم اور تارےخی موقعہ پر کے عوام کے نام اپنے پےغام مےں ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ شہدائے کشمےر کی دی ہوئی قربانےوں کی روشنی مےں ہمےں اپنے مستقبل کیلئے عزم اےثار اور بے لوث خدمت کا اعلیٰ معےار قائم کرنے کی ضرورت ہے۔/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 آزادی سے قبل شخصی راج کے خلاف جدجہد مےں عوام نے بے پناہ ہمت اور جوانمردی کا مظاہرہ کےا تھا اور ےہ قربانےاں اُسی جذبے کی علامت ہےں۔ اور ےہ تارےخ حرےت کشمےر کا اےک عظےم ورثہ ہےں۔ اُن کے خون کا اےک اےک قطرہ ہماری خودداری ، آزادی اور آبرو کا ضامن ہے۔ ےہ خون ہم پر اےک قرض ہے۔ شہےدوں نے ہماری راہوں کو آسان بنادےا تھا اور ہماری تنظےم نےشنل کانفرنس اِن ہی قربانےوں کی پےداوار ہے اور اِس تنظےم کے جھنڈے تلے ےہاں کے عوام قربانےوں کے اِس مسلسل عمل کو جاری رکھے ہوئے ہےں۔ آج جب ہماری قوم کے سامنے ڈھےر سارے مساےل نئی شکل وصورت مےں ظاہر ہوگئے ہےں۔ ہمےں اِن مسائل سے نپٹنے مےں انتہائی سوجھ بوجھ، عزم واستقلال اور جوانمردی سے کام لےنے کی ضرورت ہے۔ آیئے ہم سب ساتھ چل کر اپنے شہےدوں کے چھوڑے ہوئے نقوش اور مشن کو اپنی نظروں کے سامنے رکھےں اور قوم کی ستم ظرےفی ، مصائب اور مشکلات سے نجات دِلانے کیلئے کوشان رہےں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں