50کھرب ڈالر کی معیشت صرف ریاضی کے ضرب تقسیم سے نہیں:سیتارمن

نئی دہلی، 13 جولائی âیو این آئیá وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن نے ہندوستانی معیشت کے سال 2024-25 تک 50 کھرب ڈالر کی معیشت بنائے جانے کے سلسلے میں سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے جمعہ کو کہا کہ یہ صرف ’ساھوکاری‘ اور کچھ برسوں میں معیشت کے بڑھنے سے ممکن نہیں ہوسکتا ہے بلکہ اس کےلئے مہنگائی ، زر مبادلہ کی شرح اورریوینیو خسارہ کو کنٹرول میں رکھنا ہوتا ہے ۔ محترمہ نرملا سیتا رمن نے عام بجٹ پر راجیہ سبھا میں ہونے والی بحث کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اگر یہ صرف ریاضی کا ضرب تقسیم کا حصہ ہوتا تو کانگریس کے 60 برسوں کی مدت میں بھی ممکن ہوگیا ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ تمام سماجی بہبود کاموں کے الاٹمنٹ میں اضافے کے ساتھ ہی مالیاتی نظم و ضبط پر عمل کرتے ہوئے ریونیو خسارہ کو مجموعی گھریلو پیداوار âجی ڈی پیá کے مقابلے میں 3. 3 فیصد پر رکھتے ہوئے معیشت کو رفتار دینے کے اقدامات کئے گئے ہیں۔ اس میں تمام طبقات کو ذہن میں رکھاگیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ 50 کھرب ڈالر کی معیشت بنانے کے لئے روڈ میپ پیش کیا گیا ہے ،اس سے اگلے چند برسوں تک مختلف سیکٹر میں کام کرنے کا ہدف بھی دیا گیا ہے اور اس کے حصول کے بغیر، یہ ہدف حاصل نہیں کیا جا سکتا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں