چینی فوج نے دراندازی نہیں کی: بپن راوت

نئی دہلی، 13جولائی âیو این آئیá آرمی چیف جنرل بپن راوت نے آج واضح طور پر کہا کہ لداخ کے ڈیم چوک سیکٹر میں چین کی فوج نے کوئی دراندازی نہیں کی ہے ۔جنرل راوت نے یہاں ایک تقریب کے دوران کہا کہ لداخ میں کوئی دراندازی نہیں ہوئی ہیں انہوں نے کہا کہ چینی اپنے خیال میں جسے حقیقی کنٹرول لائن مانتے ہیں وہاں تک آکر گشت کرتے ہیں اور ہم انہیں روکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مقامی سطح پر اکثر جشن تقاریب ہوتی رہتی ہیں۔ ڈیم چوک سیکٹر میں ہماری فوج اور تبتی جشن منارہے تھے اس کی بنیاد پر کچھ چینی فوجی یہ دیکھنے چلے آئے کہ کیا ہورہا ہے ۔ ہمارے کہنے پر وہ لوٹ گئے لیکن کوئی دراندازی نہیں ہوئی۔ سب معمول کے مطابق ہے ۔آرمی چیف کا یہ بیان ان رپورٹوں کے درمیان آیا ہے کہ چھ جولائی کو ڈیم چوک علاقے میں تبتیوں کے ذریعہ ان کے روحانی گرو دلائی لامہ کی سالگرہ کے موقع پر تبتی جھنڈے لہرائے جانے پر چینی فوج نے حقیقی کنٹرول لائن پار کی تھی اور ہندوستانی علاقے میں پانچ کلومیٹر اندر تک آگئے تھے ۔ انہوں نے تبتی پناہ گزینوں کے ذریعہ پرچم لہرانے کی مخالفت کی۔رپورٹ میں لداخ کے افسران کے مطابق کہا گیا تھا کہ تبتی پناہ گزین دلائی لامہ کا 84واں سالگرہ منارہے تھے ۔ ہندوستانی فوج کے جوان بھی وہاں موجود تھے ۔ انہوں نے چینی فوجیوں کو روک دیا تھا۔ بعد میں ہندوستانی افسران کے سمجھانے پر کچھ دیر بعد چینی فوجی لوٹ گئے تھے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں