راجوار ہندواڑہ اور شہر سرینگر کے کئی علاقوں میں تیز آندھی اور قہر انگیز بارشیں، سیب کے باغات اور دھان کی پنیری تباہ ، کسانوں کی سال بھر کی کمائی ضائع

سرینگر/محسن کشمیری /یو پی آئی /راجوا ر ہندواڑہ اور شہر سرینگر کے کئی علاقوں میں قہر انگیز بارشوں اور تیز آندھی چلنے کے نتیجے میں باغات اور دھان کی پنیری کو نقصان پہنچا ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ راجوار ہندواڑہ میں آدھے گھنٹے تک تیز بارشوں اور طوفانی ہوائیں چلنے کے نتیجے میں سیب کے باغات کو شدید نقصان پہنچا ہے ۔ سہ پہر کے بعد موسم نے کروٹ لی جس کے ساتھ ہی سرحدی ضلع کپواڑہ کے ہندواڑہ راجوار علاقے میں طوفانی ہوائوں کے ساتھ ساتھ تیز بارشوں کا سلسلہ شروع ہوا۔ نمائندے نے بتایا کہ کئی علاقوں میں شدید ژالہ بھاری بھی ہوئی جس کے نتیجے میں باغات اور دھان کی پنیری کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا۔ نمائندے نے مقامی لوگوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ سہ پہر چار بجے کے بعد جونہی موسم نے کروٹ لی اس دوران گھنے بادل چھا جانے کے باعث علاقے میں اندھیرا چھا گیا جس کی وجہ سے لوگ گھروں میں سہم کررہ گئے۔ نمائندے نے بتایا کہ تیز آندھی چلنے کے نتیجے میں کئی رہائشی مکانات کی چھتیں اُڑ گئیں جبکہ کئی ایک جگہوں پر درخت بھی جڑ سے اکھڑ گئے۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ سیب کے باغات اور دھان کی پنیری کو لاکھوں روپیہ کا نقصان پہنچا ہے۔ ادھر شہر سرینگر میں بھی سات بجے کے قریب تیز آندھی چلنے اور موسلا دھار بارشوں کے نتیجے میں لوگوں کو عبور و مرور میں مشکلات کا سامنا کرناپڑا۔ معلوم ہوا ہے کہ شہر سرینگر کے دیہی علاقوں میں تیز ہوائیں چلنے اور بارشوں کے نتیجے میں باغات کو نقصان پہنچنے کی اطلاعات موصول ہوئی ہے۔نمائندے کا کہنا ہے کہ بارشوں کی وجہ سے نچلے علاقوں میں پانی جمع ہو گیا ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو سخت مشکلا ت کا سامنا کرناپڑا۔ پائین شہر کے بابا ڈیم علاقے میں شاہرائوں پر ایک فٹ تک پانی جمع ہو گیا ہے۔ مقامی لوگوں کے مطابق/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 ڈرینج سسٹم ناکارہ ہونے کے باعث بابا ڈیمب علاقے میں معمولی بارشوں کے نتیجے میں ایک فٹ تک پانی جمع ہو جاتا ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو عبور و مرور میں مشکلات کا سامنا کرناپڑتا ہے۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں