خلیل بند کی نیشنل میں شمولیت کے فوراً بعد رتن پوری مستعفی

سرینگر/ کے این ایس / اے پی آئی /پی ڈی پی کے سابق سینئر لیڈرمحمد خلیل بندنے اتوار کو باضابطہ طور جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس میں شمولیت اختیار کی ہے جس دوران نوائے صبح کمپلکس میں پارٹی کی جانب سے ایک شاندار استقبال کیا گیا جس میں پارٹی لیڈران اور ورکران کی ایک بڑی تعداد شامل تھی ۔ ادھر پارٹی کے سینر لیڈر غلام نبی رتن پوری نے فرار پی ڈی پی لیڈر کے شامل ہونے کے چند منٹ بعد نیشنل کانفرنس کو اپنا استعفیٰ پیش کیا ہے ۔ سابق سینئر پی ڈی پی لیڈر اور وزیر/جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
محمد خلیل بند نے باضابطہ طور نیشنل کانفرنس میں شمولیت اختیار کی ہے اس دوران نوائے صبح کمپلکس میں ایک شاندار تقریب منعقد ہوئی ہے جس میں سابق وزیر اعلی و ممبر پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبد اللہ کے موجود گی میں پارٹی میں شمولیت اختیار کی ہے اس دوران بند کا انتہائی گرم جوشی اور نعروں سے استقبال کیا گیا ہے ۔ تقریب میں سابق پی ڈی پی لیڈر کو درجنوں پھولوں کے مالا پہنائے گئے ہیں ۔تقریب میں پارٹی کے سینر لیڈان اور سابق وزرا اور کارکنان کی ایک بڑی تعداد بھی موجود تھی ۔ خیال رہے خلیل بند پی ڈی پی کا سینئر لیڈر تھا جس نے سال2002 ،2008اور2014میں اسمبلی انتخابات میں جیت درج کی ہے جب سے ان کا سیاسی کریر شروع ہوا ہے انہوں نے کبھی بھی انتخابات نہیں ہارے جس دوران وہ کئی بار مختلف سرکاری محکموں کا وزیر بھی رہ چکا ہے ۔ادھر جہاں ایک طرف نیشنل کانفرنس بند کی شمولیت کا جشن منانے میں محو تھے اسی دوران پارٹی کے سینئر لیڈر و ممبر راجہ سبھا غلام نبی رتن پوری نے محمد خلیل بند کی شمولیت کے چند منٹ بعد اپنا استعفیٰ پارٹی کو روانہ کیا ہے ۔ذرائع نے بتایا اس دوران رتن پوری نے ڈاکٹر فاروق عبد اللہ کو ایک خط روانہ کیا ہے جس میں انہوں نے انہیںسنٹرل ورکنگ کمیٹی سمیت تمام عہدوں سے دستبردار ہوکراپناستعفیٰ  پیش کیا ہے ۔انہوں نے اپنے استعفیٰ میں لکھا کہ  مجھے امید ہے وہ مجھے وہ تیز اور تلخ کلامی معاف کریں گے جو میں نے ان کے سامنے گزشتہ دس سال کے دوران مختلف اوقات کے دوران کی ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں