سابق وزیر تعمیرات سے کر ائم برانچ کی پوچھ گچھ ٹھیکوں کی الاٹ منٹ میں بے ضابطگیوں کا الزام، کچھ غلط نہیں کیا ، تحقیقات کےلئے مکمل تعاون فراہم کروں گا : نعیم اختر

سرینگر/ کے این ایس /کرائم برانچ نے سابق وزیر تعمیرات و سینئر پی ڈی پی لیڈر نعیم اختر کو اپنے دور اقتدار میں جے کے پی سی سی کے ٹھیکوں میںمبینہ بے ضابطگیوں کے الزام کے سلسلے میں پوچھ تاچھ کی ہے ۔ اس دوران سابق وزیر نے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے بتایا کہ وہ تحقیقات میں پولیس کو مکمل تعاون فراہم کریگی ۔  وزیر تعمیرات نعیم اختر کو اتوار کے روز کرائم برانچ نے انہیںوزیر تعمیرات رہنے کے وقت جموں کشمیر ، پروجیکٹ کانسٹرکشن، کارپوریشن ، âجے کے پی سی سیá میں ٹھیکوں کی الاٹ منٹ میں مبینہ الزام کے پاداش میں پوچھ تاچھ کی ہے ۔ اس دوران سابق وزیر نے میڈیا کے ایک حلقے کے ساتھ بات کرتے ہوئے تمام الزمات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ میں نے کچھ غلط کیا ہی نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وہ پولیس کو معاملے کی تحقیقات میں اپنا مکمل تعاون پیش کریں گے ۔ ذرائع نے بتایا نعیم اختر کواس حوالے سے اسلامک یونیورسٹی اور ایمز کی تعمیرات کے ٹھیکوں کے الاٹ منٹ معاملے کے حوالے سے ان کے /جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
گھر میں پوچھ تاچھ کی گئی ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ ٹھیکہ ان افراد کو فراہم کئے گئے جن کو تعمیرات کے حوالے کوئی بھی جانکاری نہیں ہے ۔ اس دوران پی ڈی پی لیڈر نے بتایا میں نے سوالات کا جواب دیا ہے اور مسئلہ حل ہوا ہے ۔ انہوں نے بتایا مجھے جوڈیشری پر پورا بھروسہ ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں