سی بی آئی اناؤ سانحہ کی جانچ میں تیزی،ملزم کے آرمس لائسنس منسوخ

لکھنؤ: 03 اگستâیواین آئیá سپریم کورٹ کی ہدایات پر عمل آوری کےلئے سی بی آئی نے اناؤ ریپ کیس متأثرہ کے ساتھ رائے بریلی میں پیش آئے سڑک حادثے کی جانچ کا آغاز کردیا ہے تو وہیں اناؤ ضلع انتظامیہ نے پارٹی سے برخاست کئے جانے کے بعد ملزم ایم ایل اے کلدیپ سنگھ سینگر کے خلاف کاروائی شروع کردی ہے ۔اناؤضلع انتظامیہ نے ملزم ایم ایل اے کلدیپ سنگھ سینگر کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے ان کے ذاتی ہتھیاروں کے لائنسنس منسوخ کردئے ہیں۔ اس ضمن میں ڈسٹرکٹر مجسٹریٹ دویندر کمار پانڈے نے جمعہ کو بتایا کہ ہتھیاروں کے لائنسنس منسوخ کئے جانے باقی تھے کیونکہ انتظامیہ کو عدالت کے ہدایت کا انتظار تھا۔ہتھیاروں کے لائنسنس کی منسوخی ایک عدالتی کاروائی ہے اس ضمن میں کئی اقدام کی ضرورت ہوتی ہے ۔سینگر کے نام تین لائسنس جاری کئے گئے ہیں۔جن میں ایک سنگل بیرل گن، ایک رائفل اور ایک ریوالور شامل ہیں۔ وہیں دوسری جانب سنیچر کو کے جی ایم یو کی جانب سے جاری ہیلتھ بلیٹن کے مطابق متأثرہ اور اس کی وکیل کی حالت اب بھی نازک بنی ہوئی ہے ۔ سی بی آئی نے ٹرک ڈرائیور اور کلینر کو ریمانڈ پر لینے کے بعد ملزم ایم ایل اے او ردیگر 9 افراد سے پوچھ گچھ کے لئے ریمانڈر کے لئے آج سی بی آئی کی اسپیشل عدالت میں عرضی داخل کرے گی۔سپریم کورٹ کی ہدایت پر کار حادثے کا کیس پندرہ دنوں تک لکھنؤ میں ہی رہے گا ۔ سی بی آئی افسران کی ایک ٹیم سنیچر کو متأثرہ کے اہل خانہ سے کے جی ایم یو میں ملاقات کی اور حادثے و دیگر معاملوں میں ان کے بیانات درج کئے ۔اگر ڈاکٹروں نے اجازت دی تو سی بی آئی زخمی وکیل سے بھی ان کا بیان لے سکتی ہے ۔سی بی آئی گذشتہ دو دنوں سے رائے بریلی میں پیش آئے حادثے کی جگہ کا لگاتار دورہ کررہی ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں