15ویں ہفتے بھی نماز جمعہ کے اجتماعات منعقد نہیں ہو سکے درگاہ شریف حضر ت بل اورجامع مسجد سر ینگر کے منبر ومحراب خاموش

سی این ایس : سرینگر/ معمول کی سرگر میاں بحال ہونے کے باوجود جمعہ کو درگا ہ شریف حضر ت بل اورجامع مسجد سر ینگر سمیت خانقاہوں ، زیا ر ت گاہوں، امام باڑوں و دہگر چھوٹی بڑ ی مساجد میں15ویں ہفتے بھی نماز جمعہ کے اجتماعات منعقد نہیں ہو سکے۔ کووڈ19 کے مثبت کیسوں میں روز افزوں اضافے اور اموات سے جہاں لوگ دہشت زدہ ہیں وہیں حکومت نے بھی لوگوں کی نقل و حرکت کو محدود کرنے کے لئے ہلکی پابندیاں عائد رہیں تا ہم ا سکے باوجود بھی سڑ کوں پر نجی ٹرےفک کی نقل وحر کت جاری تھی اور لوگ کی نقل وحر کت کو آ سا ن بنا یا گیا تھا۔23مارچ سے ملک گیر لاک ڈاؤن کے بعد وادی بھر کی جامع مساجد میں باجماعت نمازوں پر روک لگادی گئی ہے،اور اس ضمن میں وادی کے علماءنے اتفاق رائے سے جموں کشمیر انتظامیہ کے اس فیصلے کی توثیق کی، جس میں کورونا وائرس کی زنجیر توڑنے کیلئے ایسا کرنا لازمی ہے۔ جمعہ کو15ویں ہفتے بھی درگا ہ شریف حضر ت بل،جامع مسجد سر ینگر اورچرارشریف سمیت خانقاہوں ، امام باڑوں اور دیگر مساجد میں نماز جمعہ کے اجتماعات منعقد نہیں ہو سکے اور لوگوں نے گھروں میں ہی جمعہ کے بد لے نما ظہر ادا کی البتہ چھوٹی بڑ ی مسا جد میں لوگوںنے نماز جمعہ ادا کی۔ بارہمولہ ،کپوارہ ، ،بڈگام ،گاندربل ،پلوامہ ،شوپیان اورکولگام میں بھی اسی طرح کی صورتحال رہی۔ شہر میں بڑ ے پیمانے پر پبلک ٹرانسپورٹ کی نقل وحر کت میں اضا فہ دیکھنے کو ملا ۔ وادی دیگر قصبوں میں بھی اسی طرح کی صورتحال تھی جہاں کاروباری سرگرمیاں بحال ہوئی ہے تاہم پبلک ٹرانسپورٹ جزو ی چلتا ر رہا۔البتہ سومو گاڑیاں سڑ کوں پر چلتی نظر آ ئیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں