لاک ڈاؤن۔2 کا تیسرا دن زندگی کی رفتار پھر تھم گئی،جملہ سرگرمیاں ٹھپ

کے این ایس : سرینگر/ دارالحکومت سرینگر سمیت شمال وجنوب میں کورونالاک ڈاؤن۔2کے تیسرے روز بدھ کو زندگی رفتار تھم گئی جبکہ جملہ سرگرمیاں مفلوج ہو کر رہ گئیں ۔ مسلسل پابندیوں اور بندشوں سے ہر سو سنا ٹا ہی سنا ٹا ہے ۔ کورونا وائرس (کووڈ۔19) مثبت معاملات اور اموات میں مسلسل اضافے کے بیچ دارالحکومت سرینگر میں دوبارہ نافذ کئے گئے لاک ڈاؤن کے نتیجے میں پہلے سے مشکلات میں مبتلاءلوگوں کو مزید مسائل و مشکلات اور مصائب کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔شہر سرینگر مےں بیشتر رابطہ سڑکوں کو سیل کردیا گیا ہے اور درجنوں علاقوں کو موٹی سلاخوں سے بند کرکے جیل میں تبدیل کیا گیا ہے ۔اس دوران پولیس اور سی آر پی ایف کے اضافی دستوں کو بھی جگہ جگہ تعینات کیا گیاہے۔ناکہ بندی ،تالہ بندی اور نقل وحرکت جاری بندشوں کے دورا ن پبلک ٹرانسپورٹ سڑکوں سے غائب رہا ۔شہرکے تجارتی مرکز لالچوک سمیت میں دکانےں بند رہیں جبکہ دےگرتجارتی اور کاروباری سرگرمےاں ٹھپ رہےں۔شہر کے سول لائنز ،پائین شہر اور دیگر علاقوں میں پولیس اور فورسز نے سڑکوں اور چوراہوں پر خار دار تار نصب کی گئی اور گاڑیوں کو جگہ جگہ روکا جارہا ہے ۔شہر میں دن بھر بازار بندرہے اور سڑکیں بھی سنسان نظر آرہی تھیں۔ تاہم کئی ایک رابطہ سڑکوں پر نجی گاڑیوں کی آوا جاہی دن بھر جاری رہی ۔پائین شہر کے نوہٹہ چوک میں صبح سے ہی پولیس اور فورسز کی بھاری تعیناتی عمل میں لائی گئی تھی تاہم لوگوں کو چلنے پھرنے سے نہیں روکا جارہا تھا اور کچھ حد تک نجی ٹرانسپورٹ بھی چلتا نظر آ رہا تھا۔۔شہر میں دفعہ 144کے تحت عائد پابندیوں کی وجہ سے لوگ زیادہ تر گھروں میں ہی رہے۔کئی مقامات پر تعینات پولیس اور سی آر پی ایف اہلکاروں نے کسی بھی گاڑی کو چلنے کی اجازت نہیں دی اور صرف لازمی سروسز اور ہسپتال جانے والی گاڑیوں کو ہی چھوڑا جارہا تھا۔ اس طرح کل پورے شہر میں ہو کا عالم رہا اور لوگوں نے گھروں میں ہی رہنے کو ترجیح دی۔ ادھر اننت ناگ ، کپوارہ اور گاندربل مےں بھی اےسی صورتحا ل دےکھنی کوملی۔ ٹرانسپورٹ سڑکوں سے غائب رہا، بازارنہیں کھلے اور لوگوں کی آمد و رفت معطل رہی۔پلوامہ میںپانچ روزہ لاک ڈاون کے دوسرے روزکاروباری اداروں سمیت پبلک ٹرانسپورٹ کو بھی بند رہا۔ ضلع میں تمام کاروباری ادارے بند اور پبلک ٹرانسپورٹ بھی معطل ہے۔ضلع انتظامیہ نے سماجی دوری اور ایس او پیز کی پاسداری نہ کرنے پر قانونی کاروائی کرنے کا انتباہ دیا ہے۔ادھر کپوارہ میں دفعہ144کے تحت پابندیوں میں توسیع کی گئی ہے ۔ادھر بارہمولہ میں بندشیں جاری ہے جبکہ بانڈی پورہ میں ملا جلا رد عمل میں دیکھنے کو ملا ۔کہیں بند ۔کہیں بندشیں اور کہیں پابندیوں کا ماحول ۔ضلع گاندربل نے لاک ڈاؤن ختم کرنے کا اعلان کیا ۔جمعرات سے یہاں کاروباری وتجارتی سرگرمیاں بحال کرنے کا حکم دیا گیا ۔تاہم کووڈ۔19پر عمل پیرا ہونے کو لازمی قرار دیا گیا ہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں