پلوامہ میں فوجی اہلکار کا بھائی لاپتہ والدین کی واپس آنے کی اپیل،پولیس نے گمشدگی کی رپورٹ درج کی

    سرینگر/یو پی آئی / پلوامہ کے تملہ ہال گاوں میں ایک فوجی اہلکار کا بھائی لاپتہ ہوا ہے اور گھروالوں نے اس کے واپس لوٹنے کی اپیل کی ہے۔ سات روز قبل تملہ ہال پلوامہ کا رہنے والا طالب علم 20سالہ جنید رشید وانی ولد عبدالرشید وانی پُر اسرار طور پر لاپتہ ہو گیا جس کے بعد اہلِ خانہ نے اُس کو تلاش کرنا شروع کیا تاہم ایک ہفتہ گزر جانے کے باوجود بھی طالب علم کا کئی پر اتہ پتہ نہیں چل سکا۔ لاپتہ نوجوان کے والد عبدالرشید نے بتایا کہ ہم اپنے فوجی بیٹے کی  کی سگی تیاریوں میں مصروف تھے کہ اس دوران جنید کسی کام کے سلسلے میں بازار گیاتاہم تب سے وہ واپس نہیں آیاہے۔ والد نے بتایا کہ میرے بیٹے کا تب سے فون سوچ آف آرہا ہے۔ بد نصیب والد نے بتایا کہ 10ستمبر کو پولیس تھانہ میں گمشدگی کی رپورٹ بھی درج کی ہے۔اس کے گھریلو ذرائع کے مطابق ڈگری کالیج پلوامہ میں پہلے سمسٹر کا طالب علم۰۲سالہ جنید رشید ولد عبد الرشید ساکن تملہ ہال سات روز قبل لالپتہ ہوا ہے۔جنید کے والد عبد الرشید نے بتایا کہ وہ اپنے بڑے بیٹے ، جو ایک فوجی ہے، کی سگائی کی تیاریوں میں مصروف تھے اورجنید کوئی چیز لانے بازارگیا لیکن واپس نہیں لوٹا۔انہوں نے کہا کہ جنید کا فون بھی بند آرہا ہے اور انہوں نے اپنے سبھی رشتہ داروں سے بھی اْس کے بارے میں پوچھا لیکن اس کا کہیں اتہ پتہ نہیں ملا۔انہوں نے مزید کہا کہ جنید کے لاپتہ ہونے کے بارے میں لاسی پورہ پولیس تھانے میں رپورٹ درج کرائی گئی ہے۔
جنید کے والدین نے اپنے بیٹے سے واپس لوٹنے کی اپیل کی ہے۔انہوں نے جنگجو تنظیموں سے بھی ان کے بیٹے کو واپس بھیجنے کی اپیل کی ہے ،اگر وہ اْن کے ساتھ ہے۔پولیس ذرائع نے بتایا کہ جنید کے لاپتہ ہونے کی تحقیقات کی جارہی ہے۔حالیہ دنوں میںجنوبی کشمیر میں کسی فوجی اہلکار کے بھائی کے لاپتہ ہونے کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ اس سے قبل وانہ گنڈ ڈورو میں بھی ایک فوجی اہلکار کا بھائی لاپتہ ہوگیا۔انہوں نے بعد میں سوشل میڈیا کے ذریعے جنگجووں کی صف میں شامل ہونے کا باضابطہ اعلان کیا۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں