فورسز کیمپ سے مفرور ایس او جی اہلکار بچ کرنکل گیا :پولیس - ناگام چاڈورہ میں جھڑپ ، جنگجو کی زندہ گرفتاری کا دعویٰ

ضلع بڈگام میں تلاشی مہم ، خصوصی ناکے بٹھادئے گئے راہ گیروں اور موٹر سائیکل سواروں سے پوچھ گچھ

یو پی آئی � اے پی آئی � سی این آئی : سرینگر/وسطی ضلع بڈگام کے ناگام چاڈورہ گاؤں میں عسکریت پسندوں اور سیکورٹی فورسز کے مابین تصادم کے بعد پولیس نے ایک جنگجو کو زندہ گرفتار کرنے میں کامیاب حاصل کی جبکہ گزشتہ دنوں ملی ٹینٹ صفوں میں شامل ہونے والا ایس پی او تصادم کے دوران بچ نکلنے میں کامیاب ہوا ۔ آئی جی کشمیر نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ایس پی او سیکورٹی فورسز کو چکمہ دے کر فرار ہونے میں کامیاب ہوا ہے ۔  جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
ادھر اونتی پورہ میں سیکورٹی فورسز نے کمین گاہ سے بڑی مقدار میں اسلحہ وگولہ بارود ضبط کیا۔ عسکریت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد فوج ، ایس او جی اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ٹیم نے چاڈورہ کے ناگام علاقے کو محاصرے میں لے کر جونہی جنگجو مخالف آپریشن شروع کیا اس دوران کھیت میں موجود ملی ٹینٹوں اور فورسز کے مابین گولیوں کا تبادلہ شروع ہوا۔ ذرائع نے بتایا کہ کچھ دیر تک سیکورٹی فورسز اور عسکریت پسندوں کے مابین دوبدو گولیوں کا تبادلہ جاری رہا جس وجہ سے لوگ گھروں میں سہم کررہ گئے۔ نمائندے کے مطابق تصادم کی جگہ تلاشی آپریشن کے دوران سیکورٹی فورسز نے ایک جنگجو کو زندہ گرفتار کیا جس سے فوری طورپر جوائنٹ انٹروگیشن سینٹر منتقل کیا گیا۔ معلوم ہوا ہے کہ سیکورٹی فورسز نے زندہ گرفتار کئے گئے جگنجو کے قبضے سے ایک کے رائفل بھی ضبط کی ہے تاہم ایس پی او جو حال کے دنوں میں ہی چاڈورہ ایس او جی کیمپ سے دو رائفلیں اُڑا کر فرار ہوا سیکورٹی فورسز کو چکمہ دے کر اُس نے راہِ فرار اختیار کی۔ ذرائع نے زندہ گرفتار کئے گئے جنگجو کی شناخت کی گئی ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ فورسز نے ایک وسیع علاقے کو محاصرے میں لے کر مفرور ایس پی او کی بڑے پیمانے پر تلاش شروع کی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سیکورٹی فورسز نے جائے تصادم اور اُس کے ملحقہ علاقوں میں کئی گھنٹوں تک تلاشی لی تاہم اس دوران مفرور جنگجو کا کئی پر اتہ پتہ نہیں چل سکا جس کے بعد آپریشن کو ختم کیا گیا ۔ آئی جی کشمیر وجے کمار نے جھڑپ کے حوالے سے تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ جمعہ اعلیٰ الصبح سیکورٹی فورسز نے مصدقہ اطلاع موصول ہونے کے بعد چاڈورہ کے ناگام گاؤں کو محاصرے میں لے لیا ۔ آئی جی نے بتایا کہ فورسز کو مصدقہ اطلاع موصول ہوئی تھی کہ کھیت میں دو سے تین عسکریت پسند چھپے بیٹھے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ جونہی فورسز نے کھیت کی طرف پیش قدمی شروع کی تو وہاں پر موجود عسکریت پسندوں نے فورسز پر اندھا دھند فائرنگ شروع کی چنانچہ حفاظتی عملے نے بھی جوابی کارروائی کا آغاز کیا جس دوران ایک جنگجو کو زندہ گرفتار کیا گیا اور اُس کے قبضے سے اے کے رائفل بھی ضبط کی گئی۔ آئی جی نے بتایا کہ گزشتہ دنوں ایس او جی کیمپ چاڈورہ سے دو رائفلیں اُڑانے والے ایس پی او تصادم کے دوران فورسز کو چکمہ دے کر فرار ہونے میں کامیاب ہوا ہے۔ انسپکٹر جنرل آف پولیس کشمیر رینج کے مطابق مفرور ایس پی او کی بڑے پیمانے پر تلاش شروع کی گئی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مفرور ایس پی او کو تلاش کرنے کی خاطر چاڈورہ اور اُس کے ملحقہ علاقوں میں سیکورٹی فورسز کو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ تصادم کی جگہ سے پولیس کو چکمہ دے کر فرار ہونے والے ایس پی او پر نظر گزر رکھنے کی خاطر جموںوکشمیر پولیس نے اقدامات اُٹھائے ہیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں