ستمبر میں مسافر گاڑیوں کی فروخت میں 26فیصد کا اضافہ

نئی دہلی،16 اکتوبرâیواین آئیá کووڈ 19 وبا کے درمیان لاک ڈاؤن کھلنے اور پرائیویٹ گاڑیوں کی مانگ بڑھنے سے ستمبر میں مسافر گاڑیوں کی فروخت میں 26 فیصد اضافے دیکھنے میں آئے ۔ ٹووہیلیرگاڑیوں کی فروخت میں بھی تقریبا 12 فیصد کا اضافہ ہوا ہے ۔‘سیام’ کے صدر اور ماروتی سوزوکی انڈیا کے چیف ایگزیکٹو آفیسر کینیچی آیوکاوا نے تنظیم کے ڈائرکٹر جنرل راجیش مینن کے ساتھ فروخت کے اعداد و شمار جاری کیے ۔ ستمبر میں مسافر گاڑیوں کی فروخت 26.45 فیصد اضافے سے 272027 یونٹ ہوگئی۔ گذشتہ سال ستمبر میں 215124 مسافر گاڑیاں فروخت ہوئی تھیں۔ مسافر گاڑیوں میں کاریں ، یوٹلیٹی وہیکلز اور وین شامل ہیں۔ کاروں کی فروخت 28.92 فیصد اضافے سے 163981 یونٹ ، یوٹیلیٹی گاڑیوں کی فروخت 24.50 فیصد اضافے سے 96633 یونٹ اور وین کی فروخت 10.64 فیصد اضافے سے 11413 یونٹ ہوگئی۔ ٹو وہیلرز گاڑیوں کی فروخت 11.64 فیصد اضافے سے 1849546 یونٹس ہوگئی۔ اس میں موٹرسائیکلوں کی فروخت میں 17.30 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا اوراس سال ستمبر میں 1224117 مسافر گاڑیاں فروخت ہوئیں جبکہ ستمبر 2019 میں یہ 1043621 موٹرسائیکلیں تھیں۔ اسکوٹرز کی فروخت میں معمولی یعنی 0.08 فیصد کے اضافے سے 556205 یونٹ ہوگئی۔ آیوکاوا نے کہا کہ دیہی علاقوں سے زیادہ مانگیں آرہی ہیں ، تاہم تہوار کے موسم میں شہری طلب میں بھی اضافے کی امید ہے ۔  
انہوں نے کہا کہ بی ایس ۔6 کے اخراج کے معیار کو نافذ کرنے کا پورا فائدہ تب ہی دیا جائے گا جب حکومت پرانی گاڑیوں کو سڑک سے ہٹانے کے لئے پرکشش اسکریپیج پالیسی لے کر آئے گی۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں