نئی دہلی میں پاکستان کے ناظم الامورکی دفتر خارجہ پر طلبی - نگروٹہ حملے اور ڈرون دراندازی پر اسلام آباد سے احتجاج

 اے پی آئی - سرینگر ؍بن تلاب نگروٹہ جموں میں چار عسکریت پسندوں کی ہلاکت سانبہ سیکٹر میں پاکستانی ڈرون کی ہوائی حدود کی حلاف ورزی کے بعد نئی دہلی میں تعینات پاکستان کے سفارتکار کووزارت خارجہ طلب کرکے اس سے نگروٹہ معاملے میں پاکستان کے ملوث ہونے کے سلسلے میں ثبوت فراہم کئے گئے اور بھارت کی حکومت کی جا نب سے احتجاجی خط تھمادیاگیا جس میں پاکستان سے اس بات پر تشویش کااظہار کیاگیا کہ پاکستان کی سر زمین بھارت مخالف سرگرمیوں کےلئے مسلسل استعمال ( جاری صفحہ نمبر ۱۱پر)
ہورہی ہے اور پاکستان بھارت کی سالمیت اور خودمختاری کو نقصان پہنچناے کے در پر ہے اور پاکستان کی ان کارروائیوں پرملک خاموش تماشائی بن کرنہیں رہ سکتاہے پاکستان سے مطالبہ کیاگیاکہ وہ دراندازی کی کارروائیوں اور جنگبندی معاہدے کی خلاف ورزی کوروکنے کےلئے جلد سے جلد اقدامات اٹھائے جائے ۔اے پی ا ٓئی کے مطابق نگروٹہ میں چار عسکریت پسندوند کی ہلاکت عسکریت پسندوں سے چینی اور پاکستانی ساخت کے ہتھیا ربر آمد ہونے سمارٹ فون کے ذریعے پاکستان کے ساتھ عسکر یت پسندوں کے را بطے اور سانبہ سیکٹر میں پاکستانی ڈرون کے ہوائی حدود کی خلاف ورزی کی۔ بعد نئی دہلی میں تعینات پاکستان کے ڈپلومیٹ کودفتر خارجہ طلب کیاگیاجہاں اس ے نگروٹہ کے معاملے میں پاکستان کے ملوث ہونے کے بارے میں ثبوت فراہم کے گئے اور پاکستانی سفارت کا رکواحتجاجی خط تھمادیاگیا جس میں بھارت نے الزام لگایاکہ پاکستان کی سر زمین بھارت مخالف سرگرمیون کے لئے مسلسل استعمال کی جارہی ہئے۔

 اور پاکستانی سرزمین پربھارت کی سالمیت خود مختاری کو نقصان پہنچانے کے منصوبے بنائے جارہے ہیں۔احتجاجی خط میں کہاگیاہے کہ نگروٹہ میں مارے گئے عسکریت پسندودںسے جوہتھیار سمارٹ فون ادویات ضبط کئے گئے ہے ان پرپاکستان کی لیبل چسپاتھی اور پاکستان میں دہشت گردوں کی بر پور عیانت کی جارہی ہے

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں