سرینگر ، سوپور، بارہمولہ اور کپوارہ میں انٹی کورپشن بیورو کے چھاپے

غریبی کی سطح سے نیچے گذر بسر کرنے والے کنبوں کےلئے مخصوص راشن میں بڑے پیمانے پر خرد برد ، کئی آفیسروں اور ملازمین کی گرفتاری متوقع

اے پی آئی : سرینگر/اے اے وائی اسکیم میں بڑے پیمانے پر بے ضابطگیوں میں ملوث امورصارفین عوامی تقسیم کاری محکمہ کے تیس سے زیادہ ملازمین کے گھروں پر چھاپے اہم دستاویزات اور ٹھوس ثبوت تحویل میں لینے کادعویٰ گرفتاریاں متوقع۔ایجنسی کے مطابق اے اے وائی اسکیم کے تحت وادی کشمیر میں بڑے پیمانے پر بے ضابطگیاں بد عنوانیاں اور رعایتی داموں پر غریبی کی سطح سے نیچے زندگی بسر کرنے والے کنبوں کو غذائی اجناس چور دروازے سے فروخت کرنے کی بنیاد پراینٹی کرپشن بیورونے بیک وقت 20جگہوں بارہمولہ ،سرینگر ،سوپور ،بڈگام ،اوڑی میںامورصافین عوامی تقسیم کاری محکمہ کے ملازمین جن میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر بھی شامل ہیں کے گھروں پرچھاپے ڈالے ۔اینٹی کرپشن بیورو کی جانب / جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
سے اہم نوعیت کے دستاویزا ت ٹھوس ثبوت تحویل میں لینے کادعویٰ کیاگیا۔ اینٹی کرپشن بیورو کے ایک سینئرافسر نے ا س بات کی تصدیق کی کہ اے اے وائی اسکیم کے تحت بڑے پیمانے پروادی کشمیرمیں بے ضابطگیاں بدعنوانیاں عمل میں لانے کی شکایت موصول ہوئی تھی جسکی باریک بینی سے تحقیقات شروع کی گئی جسکے دوران اے اے وائی اسکیم کے تحت بڑے پیمانے پرغریبی کی سطح سے نیچے زندگی بسرکرنے والے کنبوں کوفراہم کے جانے والے غذائی اجناس چوردروازے سے فروخت کرنے کے سنسنی خیزانکشافات ہوئے ہیں۔ اینٹی کرپشن بیورو کے مطابق اپنے اختیارات کاغط استعمال کرکے کروڑوں اور لاکھوں روپے کی جائیداد حاصل کرنے والے ایسے ملازمین کے گھروں پر چھاپے ڈالے گئے اور اس دوران کئی اہم نوعیت کے دستاویزات اور ٹھوس ثبوت تحویل میں لئے گئے ہےں جن کی بنیاد پرمزیدتحقیقات شروع کی جارہی ہے ۔اینٹی کرپشن بیورو کے مطابق تحقیقاتی عمل شروع کیاگیاہے مزیدچھاپوں تلاشیوں کی کاروائیوں اور کئی ملازمین کی گرفتاریاں عمل میں لانے کی کاروائی کوخارج از امکان قرار نہیں دیاجاسکتاہے ۔باخبرذرائع کے مطابق علی الصبح اینٹی کرپشن بیورو نے بارہمولہ کے کانسپور ،کرال ہار ،پوشپورہ ،کپوارہ کے کال پورہ ،سوپور کے ماڈل ٹاون ،اوڑی میں بیک وقت چھاپے ما رکارروائیاں عمل میں لاتے ہوئے تلاشی کاروائی شروع کی جوکئی گھنٹوں تک جاری رہی ا س دوران اینٹی کرپشن بیورو کی جانب سے کئی افراد سے پوچھ تاچھ بھی کئی اگر چہ ملازمین کے گرفتار ہونے کی اطلاع موصول ہوئی تا ہم سرکاری طور پراس کی تصدیق نہیں ہوسکی ۔    

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں