مرکز کاکشمیر میں کسان ریل شروع کرنے پر غور - کشمیر کے سیب کو ملک کی ہر ریاست تک پہنچانے کیلئے انتظامات کئے جارہے ہیں:مرکزی وزیر

یو پی آئی : سرینگر/مرکزی حکومت جموںوکشمیر میں سیب کے کاروبار کو فرو غ دینے کی خاطر بہت جلد کسان ریل شروع کرنے جارہی ہے ۔ معلوم ہوا ہے کہ ریل چلانے کا مقصد وادی سے سیب کو ملک کی مختلف منڈیوں تک پہنچانا ہے۔ مرکزی ریلوے وزیر کا کہنا ہے کہ وادی کشمیر کے سیبوں کو ملک کی سبھی ریاستوں میں درآمد کرانے کی خاطر کسان ریل شروع کی جارہی ہے۔ مرکزی/ جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 سرکار وادی کشمیر کے سیب کے کاروبار کو فروغ دینے کی خاطر مختلف سطحوں پر کام کر رہی ہیں۔ معلوم ہوا ہے کہ وادی کشمیر کے سیبوں کو ملک کی مختلف منڈیوں تک پہنچانے کی خاطر کسان ریل شروع کی جارہی ہے جس کا مقصد سیبوں کی مختلف منڈیوں تک آسانی راہداری فراہم کرنا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ اس سلسلے میں اگریکلچر اور ریلوے وزارت نے منصوبہ تیار کیا ہے اور بہت جلد اس کو ہری جھنڈی ملنے کا امکان ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مرکزی حکومت وادی کشمیر کے سیبوں کو مختلف ریاستوں کے ساتھ ساتھ بیرون ممالک ایکسپورٹ کرنے کے بارے میں بھی سوچ بچار کر رہی ہیں ۔ بتادیں کہ چند روز قبل مرکزی وزیر ریل پیوش گوئل نے بتایا تھا کہ مرکزی حکومت وادی کشمیر میں کسان ریل شروع کرنے پر سوچ بچار کر رہی ہے۔ انہوںنے کہاکہ رواں سال مرکزی حکومت نے وادی کشمیر کے میوہ بیوپاریوں سے سیدھے طور پر سیب خریدئے اور اس سلسلے میں سرکاری ایجنسی نیفڈ کو مقرر کیا گیا تھا جس نے بہ احسن خوبی یہ کام انجام دیا۔ مرکزی وزیر کا کہنا تھا کہ اس سال نیفڈ نے 12لاکھ ٹن سیب کشمیریون سے خریدئے ۔ مرکزی وزیر کے مطابق مجھے اس بات پر سخت مایوسی ہوتی ہے کہ ملک کی مختلف ریاستوں کے لوگ بیرون ممالک سے سیب برآمد کرتے ہیں حالانکہ وادی کشمیر میں معیاری سیب اُگتے ہیں جن کا کوئی مقابلہ ہی نہیں ہے۔ مرکزی وزیر نے بتایا کہ ہمارا مقصد کشمیر کے سیب کو ملک کی ہر ریاست تک پہنچانا ہے تاکہ سیب کے کاروبار سے جڑے افراد کو فوائد مل سکیں۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں