رات کا کم سے کم درجہ حرارت منفی 4.8ڈگری سیلیس ریکارڈ

چلہ کلان کے آغاز سے قبل درجہ حرات میں گراؤٹ کاسلسلہ برقرار- آنے والے دنوں میں سردی کی شدت میں ہوگااضافہ :محکمہ موسمیات

جے کے این ایس : سریرینگر/چالیس دنوں پرمحیط چلہ کلان کی شروعات سے ایک ہفتہ قبل کشمیروادی سخت ترین سردی کی لپیٹ میں آچکی ہے ،کیونکہ گزشتہ چھ دنوں سے مطلع صاف رہنے کے باعث درجہ حرارت میں تیزی کیساتھ تنزلی واقعہ ہوئی ہے،تاہم دن کے وقت دھوپ نکلنے کے باعث لوگ راحت محسوس کررہے ہیں ۔ منگل اوربدھ کی درمیانی شب کشمیر کے بیشتر علاقوں میں درجہ حرارت منفی تین ڈگری سے کم رہا ،تاہم سری نگر شہر میں رواں موسم سرماکی سردترین رات رہی کیونکہ شبانہ درجہ حرارت منفی 4.8ڈگری سیلشیس درج کیاگیا۔ محکمہ موسمیات کی جانب سے بدھ کی صبح جاری تفصیلات/ جاری صفحہ نمبر ۱۱پر
 میں بتایاگیاکہ سرینگر میں گذشتہ رات رواں موسم سرما کی اب تک کی سرد ترین رات رہی اور درجہ حرارت منفی4.8ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیا گیا۔اس دوران لداخ کے دراس علاقہ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی18.6ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیا گیا۔محکمہ موسمیات کے مطابق سری نگرمیں سردترین رات ریکارڈ ہونے کے ساتھ ہی وادی کے باقی سبھی اضلاع میں بھی گزشتہ شب سخت سردی رہی ۔مشہور سیاحتی مقام گلمرگ جہاں تقریباًتین فٹ برف جمع ہے ،میں دوران شب کم سے کم درجہ حرارت منفی11ڈگری سیلشیس ریکارڈکیاگیاجبکہ جنوبی کشمیر میں واقع سیاحتی مقام پہلگام میں منگل اوربدھ کی درمیانی رات کم سے کم درجہ حرارت منفی7.4ڈگری سیلشیس درج کیا گیا۔محکمہ موسمیات کے مطابق کشمیروادی کیساتھ ساتھ صوبہ جموںبھی سخت سردی کی لپیٹ میں ہے ۔جموں شہرمیں رات کاکم سے کم درجہ حرارت 5ڈگری سیلشیس ریکارڈکیاگیاجبکہ کٹرہ میں تین اعشاریہ دو،بٹوٹ میں ایک اعشاریہ تین،بانہال میں منفی تین اوربھدرواہ قصبہ میں بھی شبانہ درجہ حرارت منفی دواعشاریہ آٹھ ڈگری سیلشیس درج کیاگیا۔اس دوران لداخ کے دراس علاقہ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی18.6ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیا گیاجبکہ لیہہ میں شبانہ درجہ حرارت منفی دس اعشاریہ آٹھ ڈگری سیلشیس ریکارڈکیاگیا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق مطلع صاف رہنے کی وجہ سے ٹھنڈ میں اضافہ ہوا ہے اور توقع ہے کہ آنے والے دنوں میں درجہ حرارت میں مزید گراوٹ آئے گی۔خیال رہے چالیس دنوں پرمحیط چلہ کلان کاآغاز21دسمبر کوہوگا،اوراسکی معیاد31جنوری 2021تک جاری رہے گی۔ان چالیس دنوں میں کشمیروادی ،خطہ پیرپنچال ،وادی چناب اورلداخ میں بھاری برف باری کاامکان رہتاہے جبکہ اولین دنوںمیںہونے والی برف جم جانے کی صورت میں درجہ حرارت میں مزید گراؤٹ آجاتی ہے ،اورلوگوں کودن اوررات کے وقت انتہائی سردی اوریخ بستہ ہواؤں کاسامنا کرناپڑتاہے ۔

مزید دیکهے

متعلقہ خبریں