جنگجو مخالف اوپریشن کے دوران ’’روبوٹ ‘‘ استعمال ہونگے پہلے مرحلے پر 544جدید روبوٹ بنانے کو منظوری دی گئی ہے:وزارت دفاع

12 اگست 2017

نئی دہلی /جنگجو مخالف آپریشنوں کے دوران اب ’’روبوٹ ‘‘ عسکریت پسندوں کا مقابلہ کرئینگے کیونکہ مرکزی وزارت دفاع نے پہلے مرحلے پر 544جدید روبوٹ بنانے کو ہری جھنڈی دکھائی ہے۔ وزارت دفاع کے ایک آفیسر نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے کہاکہ بہت جلد جنگجوئوں کے ساتھ تصادم کے دوران جدید اسلحہ سے لیس رابوٹوں کو اتار اجا ئے گا۔ ریاست خاص کروا دی کشمیر میں جنگجو مخالف آپریشنوں کے دوران سیکورٹی فورسز کی جانوں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے مرکزی وزارت دفاع نے پہلے مرحلے پر 544جدید روبوٹ بنانے کو ہری جھنڈی دکھائی ہے۔ ذرائع کے مطابق مرکزی وزارت دفاع نے اس سلسلے میں بین الاقوامی کمپنی کی خدمات حاصل کی ہے جنہیں رابوٹ بنانے کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ جنگجوئوں کے ساتھ جھڑپوں کے دوران روبوٹ رہائشی مکان میں محصور جنگجوئوں کو مار گرانے کیلئے بھیجیں جائینگے تاکہ سیکورٹی فورسز کو کم سے کم جانی نقصان ہو۔ وزارت دفاع کے ایک آفیسر نے اسکی تصدیق کرتے ہوئے کہاکہ /
 جدید رابوٹ میں دیکھنے کے آلات کے ساتھ ساتھ گرنیڈ اور مارٹر شیل بھی ہونگے ۔ انہوںنے کہاکہ لیزر کی مدد سے رابوٹ عسکریت پسندوں کو نشانہ بنائینگے اور اس طرح سے سیکورٹی فورسز کی جانوں کو تحفظ فراہم ہوگا۔ انہوںنے کہاکہ اس سلسلے میں وزار ت دفاع نے تیاری شروع کی ہے اور پہلے مرحلے پر 544رابوٹ تیار کرنے کو ہری جھنڈی دکھائی گئی ہے۔

تبصرے