میزائل تجربہ کا مقصد نیوکلیائی اسلحہ لے جانے کی اہلیت کی توثیق کرنا: شمالی کوریا

15 مئ 2017 (05:52)

سیولرائٹر شمالی کوریا نے کل کہاکہ اس نے کل درمیانی سے لمبی دوری تک حملہ کرنے والی ایک نوتعمیرشدہ میزائل کا کامیابی کے ساتھ تجربہ کیا ہے ۔شمالی کوریا کی سرکاری خبررساں ایجنسی کے سی این اے نے اس بات کی اطلاع دی۔ کے سی این اے کے مطابق یہ میزائل تجربہ شمالی کوریا کے لیڈر کم جونگ اُن کی قیادت میں کیا گیا ۔ اس میزائل تجربہ کا مقصد بڑے پیمانہ پر نیوکلیائی اسلحہ لے جانے کی صلاحیت کی تصدیق کرنا تھا۔کم نے امریکہ پر غیرنیوکلیائی صلاحیت والے ممالک پر دھونس جمانے کا الزام لگایا اور وارننگ دیتے ہوئے کہاکہ امریکہ حقیقت کو نہ بھولے کیونکہ اس کا بیشتر حصہ شمالی کوریا کی میزائل کی حملہ کرنے کی صلاحیت کے اندر آتا ہے ۔شمالی کوریا نے کل راجدھانی پیونگ یانگ سے شمال مغرب میں واقع کوسونگ علاقہ سے ایک بیلسٹک میزائل کا تجربہ کیا تھا جو 787کلومیٹر تک آسمان میں گئی تھی۔ماہرین کے مطابق اس میزائل کے حملہ کرنے کے صلاحیت کم از کم 4000کلومیٹر تک ہوسکتی ہے ۔ دریں اثنائ جنوبی کوریا کی فوج نے کل کہا کہ شمالی کوریا کے درمیانے سے طویل فاصلے تک مارکرنے والی بیلسٹک میزائل کا کامیاب تجربہ کئے جانے اور اعلی درجے کی میزائل تکنیک حاصل کرنے کے دعوے کی جانچ کرنے کی ضرورت ہے ۔ اس سے پہلے شمالی کوریا نے کہا کہ اس میزائل تجربے کا مقصد بڑے پیمانے پر بھاری نیوکلیائی ہتھیار لے جانے کی صلاحیت کی تصدیق کرنا تھا۔ شمالی کوریا نے کل دارالحکومت پیونگیانگ سے شمالی کوریا میں واقع کسانگ علاقے سے ایک بیلسٹک میزائل کا تجربہ کیا تھا جو 787کلومیٹر تک آسمان میں گئی تھی۔ ماہرین کے مطابق اس میزائل کی حملہ کرنے کی صلاحیت کم از کم 4000کلومیٹر تک ہوسکتی ہے ۔

تبصرے