کشمیریوں پر جبر کی انتہا ہوگئی لبریشن فرنٹ کے کارکنوں کی نظر بندی قابل مذمت

17 مئ 2017 (05:58)

سرینگرکشمیریوں کے خلاف جاری جبر اپنی ساری سرحدیں پار کررہا ہے۔جوانوں کے ایام اسیری کو طول دینا ہو کہ لوگوں کی بلا تخصیص مار پیٹ سبھی اس جبر کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ ان باتوں کا اظہار لبریشن فرنٹ نے اپنے ایک بیان میں کیا ہے۔ پانچ اسیر جوانوں کے ایام اسیری کو طول دینے کی مثال پیش کرتے ہوئے جے کے ایل ایف نے کہا کہ وسیم احمد صوفی ساکنہ کوندبل گاندربل جو ایک پرامن سیاسی رکن ہیں کو پولیس نے ۶۱۰۲÷ئ میں گرفتار کیا تھا اور تب سے آج تک اس پر تین بار کالے قانون پی ایس اے کا اطلاق عمل میں لایا گیا ہے۔ اسی طرح بشارت احمد نجار، عاشق حسین بٹ،ریاض احمد ڈار اور منظور احمد نجار ساکنان بڈگام جو پچھلے چار سال سے قید ہیں کو بھی عدالت سے ضمانت ملنے کے باوجود غیر قانونی طور پر پولیس حراست میںجاری صفحہ 5پر

تبصرے